Culture & Arts Original Articles Urdu Articles

Pakistan’s Pro Taliban Media anguish: “We are Grieving the loss of our beloved Osama”

انتقال پرملال

‎ ‎ہم نہایت افسوس، دل گرفتگی ومغمومیت کے عالم میں یہ اندوہناک اعلان کرتے ہیں کہ ہمارے مخدوم وممدوح مجاہد ملت، فاتح ورلڈ سینٹر و غازیئ تورہ بورہ اور شہید اسلام جناب اسامہ بن لادن مبینہ طور پر ایبٹ آباد میں امریکی افواج کے ہاتھوں اور ہماری کرپٹ حکومت کی رضامندی اور افواج پاکستان کو مکمل طور پر لاعلم رکھتے ہوئے ایک آپریشن میں شہید ہوچکے ہیں.اناللہ وان الیہ راجعون

‏ ‏

اسامہ شہید وہابی المسلک ہونے کے باعث فاتحہ ودرود اور ایصال ثواب جیسی بدعات پریقین نہیں رکھتے تھے اور درحقیقت انہیں اس کی ضرورث بھی نہیں ہے کہ وہ  پوری دنیا اور بالخصوص افغانستان، پاکستان. عراق، صومالیہ اور انڈونیشیاء میں اپنی خدمات کے عوض اپنا حصے کا ثواب وصول کرچکے ہیں. اس لئے رسم قل یا ایسی کسی فروعات سے اجتناب کیا جاتا ہے البتہ آپ سب سے یہ استدعا ہے کہ ہم پسماندگان کے لئے دعا کیجیئے کہ باری تعالی کے حضور سے ہمیں صبر جمیل عطا ہو

میں نے تجھے کھویا تو ایسا لگا

جیسے مرے پاس ہو کچھ نہ بجا

الحمدللہ دشمن کو خوف کے مارے ان کے جسد خاکی کو امریکہ لے جانے کی ہمت نہیں ہوئی اورنہ ہی ان کی قبر کی مرجع خلق بننے کے خوف سے دفن کرنے کی ہمت ہوئی. جنگ آزادی 1857 کے غازی ومجاہد اسداللہ خان المعروف غالب کے بقول

ہوئے مر کے ہم جو رسوا، کیوں ہوئے نہ غرق دریا

نہ  کبھی  جنازہ  اٹھتا  ،  نہ  کہیں  مزار  ہوتا

اس پیشین گوئی کے مصداق اسامہ بن لادن شہید ہو کر غریق دریا ہوچکے ہیں،

آپ سب حضرات سے گزارش ہے کہ ان کی یاد میں موم بتیاں جلانے ، سمندر میں پھول بہانے، مچھلیوں کو آٹا اور چیلوں کو چیچھڑے  کھلانے اور اس طرح کی تمام رسوم سے اجتناب کریں کہ اس سے مرحوم کی روح کو تکلیف ہوگی.

اگرچہ برادر حامدمیر اور طلعت حسین کے باربار اصرار کے باوجود اوبامہ شیخ اسامہ کی شہادت کے ٹھوس ثبوت پیش کرنے میں ناکام رہے لیکن پھر بھی انہوں نے دیگر سرپرستوں حمید گل، اسلم بیگ، مشرف، میر شکیل اور ساتھیوں کاشف عباسی، جاوید چوہدری . معید پیرزادہ، ٹاکٹر دانش ، مبشر لقمان اور کامران خان، حنیف عباسی، طلحہ محمود، اعجازالحق اور شیخ رشید کے ہمراہ ازراہ عقیدت ایک مشت تک داڑھی بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے. عمران خان نے بھی سن بلوغت تک پہنچ جانے اور داڑھی کے بال آجانے پر ان کا ساتھ دینے کا اعلان کیا ہے

اس جذبہ ایمانی اور غیرت قومی میں ہماری بہنیں بھی کسی طور پیچھے نہیں، ہماری قابل احترام بہنوں مہر بخاری، ماریانہ بابر، شیریں مزاری، ماریہ سلطان، ماروی میمن، عاصمہ چوہدری، عاصمہ شیرازی نے اپنی پہنی ہوئی چوڑیاں توڑ دینے اور آئندہ کے لئے کلائیاں سونی رکھنے کا فیصلہ کیا ہے

اللہ ہم سب کو اس صدمہ جانکاہ سے سنبھلنے کی توفیق عطافرمائے. آمین

انجمن سوگوران و پسماندگان مجاہد اعظم اسامہ بن لادن شہید

میڈیا و ڈیفنس اینلسٹ سیکشن

About the author

Danial Lakhnavi

7 Comments

Click here to post a comment