Original Articles

IJI for 2013

This post is in light of ‘news’ of meeting between Imran and Musharaff  and the following piece by Dawn. Here is an extract:

While the Musharraf League is not denying Musharraf-Imran contacts, it says efforts are under way to form a `major alliance` of different political parties other than PPP and PML-N to give an alternate leadership.

“We have started making efforts to form an alliance of Mutahidda Quami Movement (MQM), Pakistan Tehrik-i-Insaf (PTI), All Pakistan Muslim League (APML) and breakaway factions of Pakistan Muslim League-Quaid (PML-Q) in next general elections so that people have option other than PPP and PML-N,” Fawad Chaudhry, spokesman for Musharraf`s APML, told Dawn. He said the people wanted an alternate leadership that could steer the country out of crises and address their problems.

To a question about rumours of Imran Khan`s meeting with former army chief president Pervez Musharraf in London, Chaudhry said: “The party does not deny nor confirm about the meeting, however, it wants Mr Khan to join hands with us for the larger interest of the country. Imran was critical of Musharraf when the latter was a military chief now he is a politician.”

It is clearly evident that agencies are now trying to form a new IJI. It remains to be seen if PML-N would join or if it remains in the state it is going.

It is likely that Imran Khan has been given the charge to form this alliance – hence his meetings with everyone but PPP (with whom he seems to have vowed to never meet).

Khan knows (or you hope he does) he can be a big player till N doesn’t join – if they do, he becomes marginalised again – so he’d love to remain APML with PML Q and MQM, JUI and JI forming a mixed bag alliance pulling left, right and centre; similar to 2002 really – all the King’s men.

Knowing Imran Khan, he’d muddle it up – either by not agreeing with a party (Most likely MQM, needed to form a Sindh govt) or letting N join – indications of which have already taken place – ruining his own chance of ever being anything worthwhile.

What does it mean for PPP?

I have always considered PPP and ANP to be a real alliance – and this scenario would again clear the situation, if it wasn’t clear already. There are only two Left leaning, progressive parties in Pakistan and they are those two. An isolated PPP and ANP may be bad for numbers in current Parliament, but not for next elections. It leaves voters with very clear choice.

This is also a tacit acknowledgement by the agencies that PPP is a power to reckon  with. Their interest is in a fragmented Pakistani Political scenario, with many parties each representing their own agenda. Having a national party ruins that, because to manipulate and crush small mice is easy, to kill a lion is hard. For all purposes PPP is only federal party with large bases in all four provinces. They must fabricate an alliance to counter it. Even if it means going against their long term plans.

anyways – Enjoy the Drama

See also

IJI Style Game Plan

Is Imran Khan the new choice of agencies (ISI) in Pakistan?

About the author

Sindhyar Talpur

19 Comments

Click here to post a comment
  • Who would you rather have in government ? PPP and PMLN ? or Imran Khan and smaller parties ?

  • This so called political alliance won’t be be able to win and form govt, it’s not a political alliance for 2013, but in fact comedy circus 4 2013.

  • from pkpolitics

    Bawa said:
    تحریکی انصافی انقلابی ہوشیار باش – خطرے کی گھنٹیاں بجنا شروع ہو گئی ہیں

    تبدیلی قوم کا مقدر بن چکی ہے، آنے والی تبدیلی میں عمران خان نہیں تو اس سے زیادہ قابل مخلص اور دیانتدار لیڈر قوم کو میسر آ جائے گا، اسٹبلشمنٹ کے سویلین ترجمان ہارون الرشید

    ملتان( نمائندہ جنگ) کالم نویس ہارون الرشید نے کہا ہے کہ جلد قومی سطح پر تبدیلی متوقع ہے، موجودہ حکومت مدت پوری کرتی دکھائی نہیں دیتی، ملک کو ایماندار اور بہترین نظم چلانے والے لیڈر کی ضرورت ہے۔ عمران خان کبھی ایم کیو ایم سے معاہدہ نہیں کریں گے ۔ بزم احباب کے زیر اہتمام ملتان پریس کلب میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قائداعظم محمد علی جناح جیسے لیڈر صدیوں میں پیدا ہوئے ہیں، آئیڈیل قیادت نہ بھی ہو تو تب بھی تبدیلی قوم کا مقدر بن چکی ہے ۔ نئی نسل میں سے کوئی پیپلز پارٹی ، ن لیگ یا متحدہ میں شامل نہیں ہو رہا ، عوام مخلص سچے اور نڈر لیڈر کی تلاش میں ہیں، عمران خان سیاسی لحاظ سے نا پختہ ہونے کے باوجود بہترین منتظم ہیں۔آنے والی تبدیلی میں وہ نہیں تو اس سے زیادہ قابل مخلص اور دیانتدار لیڈر قوم کو میسر آ جائے گا۔ تقریب سے کالم نویس خالد مسعود خان، محتشم ، سجاد جہانیہ نے بھی خطاب کیا

    فوجیو آو، انقلاب لائیں اور پاکستان کو خوشحال بنائیں – الطاف حسین

    http://www.nawaiwaqt.com.pk/E-Paper/Lahore/2011-03-23/page-8/detail-30

    عمران الطاف بھائی بھائی – جمہوریت تیری شامت آئی

    http://www.jang.net/urdu/details.asp?nid=515432

    خان صاحب فرما رہے ہیں کہ اگلا الیکشن ٹیلی وزن پر لڑا جائے گا. کل تک کی اطلاع تو یہ تھی کہ الیکشن انٹر نیٹ پر ہونگے آج اچانک فیصلہ بدل دیا گیا ہے. اب ہم سمجھ سکتے ہیں کہ خان صاحب اپنی پارٹی کی تنظیم سازی سے کیوں گھبراتے ہیں کیونکہ الیکشن تو ٹیلی ویزن پر لڑا جائے گا اس لیے وہ ہر وقت تی وی چینلز میں گھسے رہتے ہیں

    http://www.youtube.com/watch?feature=player_embedded&v=kRJ5qb8O9qA

    میں نے آپ سے کہا تھا کہ پرائمری سکول کے بچوں سے ایسے سوال نہیں پوچھتے کہ پی ٹی آئی کے آیندہ انتخابات میں قومی و صوبائی اسمبلیوں اور سینیٹ کے ممبر کون ہونگے. یہ بیچارے تو عمران خان اور رابعہ ضیاء کے علاوہ کسی کو جانتے ہی نہیں ہیں اور نہ ہی انہوں نے کسی اور کو ٹی وی چینلز پر دیکھا ہوگا. یہ سوال تو آپ ڈایریکٹ عمران خان سے پوچھ لیں گے تو وہ بھی لا جواب ہو جائے گا. ابھی پچھلے مہینے کاشف عباسی نے اور اس سے پہلے ڈاکٹر شاہد مسعود نے عمران خان سے یہی سوال پوچھ کر عمران خان کو مصیبت میں ڈال دیا تھا اور انکا جواب تھا آپ ان لوگوں کو جانتے نہیں ہیں. اگر پاکستانی میڈیا عمران خان کی پارٹی کے لوگوں کو نہیں جاتا تو کیا غیر ملکی میڈیا انہیں جانتا ہے؟ حقیقت یہ ہے کہ خان صاحب ٹی وی کی جان چھوڑیں گے تو میڈیا انکی پارٹی کے کسی دوسرے عہدیدار کو بلائے گا. خان صاحب کا ہی ٹی وی کیمرے کے آگے بیٹھنے کا شوق پورا نہیں ہو رہا تو کوئی اور کیسے عوام کو نظر آئیگا؟ حد تو یہ ہے کہ امریکی سفیر سے ملنا ہو تو بھی پارٹی کے کسی دوسرے عہدیدار کو ساتھ نہیں بٹھایا جاتا اور نہ ہی کسی پریس کانفرنس کے لیے ہی کسی کو ساتھ بٹھایا جاتا ہے. پتہ نہیں پارٹی میں عمران خان کے علاوہ کوئی دوسرا عہدیدار ہی بھی یا نہیں. امریکی سفیر سے تو ملاقات کو ویسے ہی خفیہ رکھنے کی کوشش کی گئی لیکن الطاف حسین سے فون پر بات چیت کے متعلق بھی پریس ریلیز جاری کرنا ہی مناسب سمجھا. ایسا لگتا ہے کہ پارٹی میں کوئی سیکریٹری نشرواشاعت نہیں ہے اور اگر ہے تو اسے اپنی زمہ داریوں کا پتہ ہی نہیں ہے

    پارٹی کی بیس پچیس سالہ تاریخ میں کبھی مرکزی صدر، آرگنائزر، سینئیر نائب صدر، نائب صدر، جنرل سیکریٹری، اڈیشنل جنرل سیکریٹری، جوائنٹ سیکریٹری، سیکریٹری نشرو اشاعت اور فنانس سیکریٹری کا انتخاب عمل میں لایا گیا؟ اگر نہیں تو کیوں نہیں؟ حالانکہ سب سے پہلے مرکزی عھدیداروں کا انتخاب کیا جاتا ہے جو تحریک انفاس بیس پچیس سال میں نہ کر سکی. قومی و صوبائی و سینیٹ کے امیدواروں کا نام پوچھ کر تو انکو شرمندہ کرنا سراسر زیادتی ہے

    جذباتی بھائی. مستقبل کی پیشین گوئیوں میں آپ ماہر ہیں لیکن آج میری یہ تحریر سنبھال کر رکھ لیں اور الیکشن کے موقع کر اسے سامنے رکھکر دیکھنا کہ کیا میں نے سچ کہا تھا یا غلط؟ آیندہ انتخابات میں ان لوگوں کو تحریک انصاف کے ٹکٹ دیے جائیں گے جن کو دوسری تمام مقبول پارٹیاں ٹکٹ دینے سے انکار کر چکی ہونگی. آئندہ الیکشن میں تحریک انصاف کے پچانوے فیصد ٹکٹ ہولڈرز دوسری پارٹیوں کے مسترد شدہ لوگ ہونگے. الیکشن میں منتخب ہونے والے لوگوں کی تعداد بتا کر فی الحال گالیاں سننے کا موڈ نہیں ہے

    smsupportmovement said:
    عمران خان اور عبد ستار ایدھی میں فرق
    ایدھی کو اسٹبلشمنٹ نے سیاست میں آنے کی دعوت ٹھکرانے پر قتل کی دھمکی دی تو وہ لندن چلا گیا پوری کہانی لکھی اور لاکر میں رکھوا دی کہ میری حادثاتی موت پر اسے کھولا جائے
    عمران خان ایک جنرل کے بلائے ہوئے نشستوں کی بندر بانٹ کے لیے بلائے گئے اجلاسوں میں شریک ہوتا رہا . انتخاب میں ایک نشست ملی اور وزارت عظمی نہ ملی تو مخالف ہو گیا
    ایدھی داڑھی رکھ کر بھی بلا تفریق مذھب خدمت پر یقین رکھتا ہے اور عمران خان صفا چٹ ہو کر بھی طالبان کا حامی ہے

    http://pkpolitics.com/2011/03/22/letter-to-imran-khan-on-altaf-contact/

  • Hamza, Are you really asking people at CriticalPPP who they want to win? 🙂

    anyways I agree with Junaid, the alliance is fabricated one. Lets see first if it even sticks. Remember APDM? took one stroke of that Political Scientist to leave that charade in tatters.
    Then if it does stick, so many variables – Punjab this time wouldn’t play same tune as it did last time. Let me put it this way – After making a huge effort of building such an alliance, they’d have to make even larger effort to rig the election to even come near forming a government

  • Imran Khan’s Meeting with General Pervez Musharraf – 1 (Apas Ki Baat 12 April 2011) http://www.youtube.com/watch?v=phBYjst-48Q&feature=channel_video_title

    Imran Khan’s Meeting with General Pervez Musharraf – 2 (Apas Ki Baat 12 April 2011) http://www.youtube.com/watch?v=RXyMDvTD_jE&feature=channel_video_title

    Imran Khan’s Meeting with General Pervez Musharraf – 3 (Apas Ki Baat 12 April 2011) http://www.youtube.com/watch?v=SKY8GW_X8A0&feature=channel_video_title

    Imran Khan’s Meeting with General Pervez Musharraf – 4 (Apas Ki Baat 12 April 2011) http://www.youtube.com/watch?v=8d4GMPWHQDk&feature=channel_video_title

  • They are All Anti PPP Elements aur awam kay Dhutkaray hue log hain becharay ! imran Khan hon ya koi Makhdom awami party ka kuch nahe karsaktay !

  • Political observers and commentators are agree that now our security and intelligence establishment is not all-powerful or sole decision maker. Although it appears very powerful, yet recent events show it is under strict security and continuously losing it’s power to rig election and form Govts.

  • @Sindhyar, great post. In a way, I hope you had not written this and let the security establishment make another bo bo for themselves.

  • I think they have seen the writing on the wall. If the PPP is able to complete its term despite of all the propaganda, then they are quite likely to get reelected as the biggest political party. In sheer desperation they are thinking of another kings party or IJI

  • ” There are only two Left leaning, progressive parties in Pakistan ANP and PPP ”

    @ are you sure PPP is left leaning party ??? and after knwoing that who is No.2 in PPP after Mr.Zardari i think you know very well about new soldure of BHUTOO our beloved BABAR AWAN…..so still you feel PPP is left leaning party….in prasence of BABAR AWAN…???

  • @ Mai Kolachi
    lol – thanks – In ko ‘Sab pata hai’. To them its worth a shot. Unlimited funds that they have from us.

    @ AHMED BALOCH
    On principles it is still left leaning – Babar Awan et al don’t represent the crux of the party. Important fact is, if you want a Social Welfare Pakistan, PPP is your best bet.
    Since fall of Berlin wall, Left has been trying to redefine itself – we must also bear that in mind
    Peace