Original Articles

کالعدم تکفیری تنظیموں کے بعد جمیعت علما اسلام بھی زبردستی تبدیلی مذہب مہم میں شامل

پاکستان میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی پر مبنی واقعات یعنی جبری تبدیلی مذہب کے واقعات میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ خیبر پختونخواہ کے شہر مانسہرہ کے بعد خیر پور میرس سندھ میں بھی امام حسین ؑ اور ان کے اصحاب وانصار کے قاتل اور اموی حکمران یزید ابن معاویہ کے بارے میں ایک شیعہ نوجوان سے زبردستی بیعت کروانے اور اپنے عقائد کو جھٹلانے کی ویڈیو منظرعام پر آئی ہے ۔

جمعیت علماءاسلام (فضل الرحمٰن)گروپ کے مقامی رہنماؤں کی جانب سے ایک شیعہ نواجون سیدنوید شاہ ولد سید کاظم شاہ مرحوم سے جبری طور پر معاویہ اور ابوسفیان کو امیر المومنین منوایا گیا۔ ریاست پاکستان کے کرتا دھرتاافراد کیلئے لمحہ فکریہ ، ایسا ظالمانہ وریہ تو بھارت میں ہندو مسلمانوں کے ساتھ بھی اختیار نہیں کرتے۔

یاد رہے یہ ویڈیو ان کئی ویڈیوز میں سے ایک ہے جو حالیہ دنوں میں سامنے آئی ہیں جن میں شیعہ نوجوانوں کو زبردستی تکفیری عقائد ماننے اور شیعہ عقائد جھٹلانے پر مجبور کیا جاتا ہے۔تفصیلات کے مطابق خیر پور میرس سندھ سے تعلق رکھنے والے سید نوید شاہ ولد سید کاظم شاہ مرحوم سے جمعیت علمائے اسلام (ف)کے مقامی رہنماؤں نےبزور طاقت نواسہ رسول ؐامام حسین ؑ اور ان کے اہلبیت اطہار علیہ السلام کے قاتل یزید ، یزید کے باپ اور داد اکی شان میں تعریف وتوصیف بیان کروائی اور انہیں امیر المومنین قراردلوایا گیا۔

واضح رہے کہ سید نوید شاہ نے سوشل میڈیا پر سید الشہداءامام حسین ؑ اور ان کے اصحاب وانصار کے قاتل یزید کے خلاف پوسٹ شیئرکی تھی جس پر جمعیت علمائے اسلام (ف)کے مقامی رہنماؤں نے اس پر شدید دباؤڈالا اور جان سے مارنے کی دھمکیاں بھی دیں ۔وزیر اعظم عمران خان، آرمی چیف جنرل باجوہ اور وزیر اعلیٰ سندھ کالعدم دہشت گرد جماعتوں اور مذہبی انتہا پسند عناصر کی جانب سے بڑھتی ہوئی فرقہ وارانہ کارروائیوں کا فوری نوٹس لیں اور ذبر دستی عقائد کی تبدیلی کے اس ناقابل قبول سلسلے کو روکیں۔ ایسے واقعات نہ صرف آئین پاکستان کی کھلی خلاف ورزی ہیں بلکہ انسانی حقوق کی بھی سنگین خلاف ورزی ہیں۔

خیر پور میرس سندھ میں جمیعت علمائے اسلام (فضل الرحمن) کے مقامی ناصبی مولویوں کی جانب سے ایک عزادار سید نوید شاہ ولد سید کاظم شاہ مرحوم سے جبری طور پر معاویہ اور ابوسفیان کو امیر المومنین منوائے جانے کی وڈیو منظر عام پر آگئی؟

Posted by Karam Ali Rahib Jafferi on Thursday, September 10, 2020