Original Articles Urdu Articles

سابقہ لاڈلا بگڑ بیٹھا ہے – عامر حسینی

احتساب عدالت اسلام آباد کے جج ارشد ملک نے مریم نواز شریف کی پیش کردہ وڈیو کو مسخ کردہ، جعلی قرار دے ڈالا، ناصر بٹ سے پُرانی شناسائی کا اعتراف


نواز شریف کے خلاف کیسز کی سماعت کے دوران نواز لیگ کی طرف سے بھاری رشوت کی پیشکش اور دھمکیوں و دباؤ کا الزام
پریس کانفرنس کو کردار کُشی قرار دیتے ہوئے کاروائی کا مطالبہ کرڈالا

کیا اب مسلم لیگ نواز اُس مبینہ وڈیو کو سامنے لے کر آئے گی؟ جو اس کے بقول جج ارشد ملک کو بلیک میل کرنے میں کامیابی کا موجب بنی؟

حسین نواز اس سے قبل وڈیو کے فرانزک کے مطالبے کو تسلیم کرچُکے ہیں

لیکن کیا موجودہ حکومت سے فرانزک کروانے پر نواز لیگ راضی ہوگی؟
اُس پریس کانفرنس کے دوران شہباز شریف نے چیف آف آرمی سٹاف اور چیف جسٹس سے انصاف کرنے کی درخواست کی تھی

اگر چیف جسٹس سپریم کورٹ نے اس معاملے کا ازخود نوٹس لے لیا تو کیا نواز لیگ اس کے بعد آنے والے فیصلے کو تسلیم کرے گی؟

مریم نواز شریف نے کہا تھا کہ اُن کے پاس مزید کئی وڈیو ثبوت ہیں تو کیا آنے والے دنوں میں وہ وڈیوز منظر عام پر آئیں گی؟

بقول حامد میر، ‘اب جیل جانے سے کسی کو ڈر نہیں لگتا، ڈرو اُس وقت سے جب ایک اور وڈیو سامنے آئے اور آسمان گرپڑے

نواز لیگ گھر کی بھیدی ہے اور نواز لیگ نواز شریف کو مائنس کرکے کسی سمجھوتے پر آمادہ نہیں ہے اور نواز شریف کی شرط بات چیت کی ہے کہ اُن پر مقدمات ختم کیے جائیں اور اُن کی بیٹی مریم نواز کے نواز لیگ میں مرکزی سیاسی کردار کو تسلیم کیا جائے

اور اس کے لیے وہ ہر انتہا کو چھُولینے پر تیار بیٹھے ہیں

گویا


ہم تو ڈوبے ہیں صنم، تم کو بھی لے ڈوبیں گے والا معاملہ ہے، سابقہ لاڈلہ بگڑ گیا ہے اور سابقہ لاڈلے کا سینہ ہمہ قسم کے اچھے بُرے رازوں کا مخزن ہے