Original Articles Urdu Articles

معروف گائناکالوجسٹ ڈاکٹر ثریا نثار کھوسہ کا یوم شہادت

چھ جون ٢٠٠٤ کوکالعدم تکفیری خوارج جماعت سپاہ صحابہ کے دہشت گردوں نے ڈیرہ غازی خان کی معروف لیڈی ڈاکٹر ثریا نثار کھوسہ کو شہید کر دیا-

چھپن سالہ گائناکالوجسٹ ثریا نثار ڈیرہ غازی خان کے ضلعی ہسپتال میں ملازم تھیں اور ایک نجی ہسپتال الزہرہ کی مالک تھیں۔

اتوار کی سہ پہر ایک تکفیری دہشتگرد ایک برقعہ پوش مریض کے روپ میں ہسپتال میں داخل ہوا اور اس نے ڈاکٹر ثریا کا پوچھا۔ جب وہ آپریشن تھیٹر سے باہر آئیں تو ان پر فائرنگ شروع کر دی۔

ڈاکٹر ثریا فائرنگ کے سبب موقع پر ہی ہلاک ہوگئیں جبکہ حملہ آور پیدل ہی وہاں سے فرار ہوگیا۔ ایک ڈسپینسر ابراہیم بھی فائرنگ کی زد میں آ کر زخمی ہو گیا

اس سے پہلے کراچی میں درجنوں شیعہ ڈاکٹر الگ الگ حملوں میں قتل کیے جا چکے ہیں۔ کالعدم خارجی دہشتگرد جماعت سپاہ صحابہ نے ہزاروں سنی بریلوی، صوفی اور شیعہ مسلمانوں کو قتل کیا ہے

ڈاکٹر ثریا کا جرم فقط یہ تھا کہ وہ ایک شیعه مسلمان تھیں اور مزہبی و مسلکی تعلق سے قطع نظر تمام دکھی انسانوں کی خدمت کرتی تھیں آپ کو اہلبیت عظام رضی اللہ عنھم اور اولیا اللہ رحمھم اللہ سے خاص عقیدت تھی

شہیدکی خدمات

-الزہرا فری پبلک سکول براے خواتین کا قیام
-خدیجۃ الکبرا فری وکیشنل سکول کا قیام
-شہداِ کے یتیموں کی مالی معاونت
– ہر ماہ رمضان میں خواتین کے لیے دروس و باجماعت نماز کا اہتمام
جامعۃ الزہرا کے قیام میں مالی معاونت
خواتین کے لیے مسجد سکینہ بنت الحسینء کا قیام

التماس تلاوت سورہ فاتحہ و سورہ اخلاص برا ئے بلندی درجات