اردو اصل

با با کوڈا جھنگوی اور وطن عزیز میں سنی شیعہ فسادات پھیلانے کی مذموم سازش

بابا کوڈا نامی ایک مشکوک اور بدزبان بلاگر فیس بک پر اپنے آپ کو تحریک انصاف کا حامی ظاہر کرتا ہے لیکن درحقیقت کالعدم تکفیری خارجی دہشت گرد گروہ لشکر جھنگوی سپاہ صحابہ کا سرگرم رکن ہے اور پاک سر زمین پر شام، لیبیا اور عراق کی طرح فرقہ وارانہ خونریزی اور خانہ جنگی پھیلانے کی ناپاک سازش میں ملوث ہے، کراچی میں معروف سماجی کارکن سبین محمود اور چالیس سے زائد اسماعیلی شیعہ مسلمانوں کے قتل میں ملوث اعلی تعلیم یافتہ مجرم سعد عزیز کی طرح بابا کوڈا جھنگوی بھی کالعدم دہشت گرد جماعت لشکر جھنگوی سپاہ صحابہ کے بانی مولوی حقنواز جھنگوی دیوبندی اور تنظیم اسلامی کے بانی ڈاکٹر اسرار احمد کا مقلد ہے اور ان دونوں حضرات کے خارجی، تکفیری، فرقہ وارانہ نظریات کا پرچار کرتا رہتا ہے

سوشل میڈیا پر بابا کوڈاجھنگوی نے جمہور اہلسنت بریلوی مسلک اور شیعہ مسلک کے مسلمانوں کے علاوہ مولانا طارق جمیل اور مولانا فضل ا لرحمن جیسے اتحاد امت کے حامی دیوبندی علما کے خلاف نہایت منظم طریقے سے نفرت انگیز فرقہ وارانہ مہم شروع کی ہے جس کا مقصد جھوٹی باتیں اور روایات پھیلا کر، نفرت کے شعلے بھڑکا کر کچے ذہن کے نو جوانوں کو گمراہ کرنا اور لشکر جھنگوی سپاہ صحابہ کے خوارج کے ہاتھوں زیادہ سے زیادہ اہلسنت بریلوی ،شیعہ اور اعتدال پسند دیوبندی و اہلحدیث مسلمانوں کو قتل کرناہے، ٣٠ اکتوبر کو اپنی ایک پوسٹ میں اس نے اہلسنت بریلویوں کے خلاف نہایت نفرت انگیز باتیں کیں جبکہ اہل تشیع کو قران مجید کا منکر اور تحریف قران کا قائل قرار دیا جو کہ ایک جھوٹ اور بہتان ہے ، اس سے قبل بابا کوڈ ا جھنگوی نے اولیا الله کے مزارات پر حملہ کر کے انہیں زمین بوس کرنے کی دھمکی دی تھی، اہلسنت بریلوی کو قبر پرست اور مشرک قرار دیا، مرزا غلام احمد قادیانی کو اھلحدیث کا یار قرار دیا، جبکہ حضرت علی کرم الله وجہ کے خلاف بھی اپنے ممدوح ناصبی بدبخت ڈاکٹر اسرار اور حقنواز جھنگوی کی طرح انتہائی توہین آمیز بکواس کر چکا ہے ، اپنی فرقہ وارانہ نفرت والی بکواس اور اہلبیت رضی الله عنہم و اولیا کرم رحمہ الله پر بے بنیاد الزامات کی بنیاد پر یہ شخص قانون پاکستان کا مجرم ہے اور قانونی سزا کا مستحق

تمام اہل پاکستان ، خواہ ان کا تعلق کسی مذھب، فرقے یا مسلک سے ہو، کی ذمہ داری ہے کہ اس لعنتی ناصبی انسان کی نفرت انگیز پوسٹوں کے سکرین شاٹس لیں اور اس کے خلاف اپنے مقامی تھانوں اور ایف آئی اے سائبر کرائم میں اس پتے پر ایف آئی آر درج کرائیں

 

http://complaint.fia.gov.pk

 

تمام محب وطن پاکستانی شہری اس بدبخت کو شناخت کر کے گھسیٹ کر مقامی تھانے لے کر جائیں اور انسداد دہشت گردی کی عدالت اور پیمرا میں اس کے خلاف تحریری شکایت درج کرائیں ، امت مسلمہ کی وحدت اور پاک سرزمین میں امن و آشتی کے اس ناپاک دشمن کا ٹھکانہ آخر ت میں جنہم اور دنیا میں تختہ دار بنے گا – انشا الله