Original Articles Urdu Articles

Ist December…..

I wrote this poem last year on the first anniversary of Bibi Shaheed. It was published on PTH on Bibi’s birthday and now on her 2nd death anniversary I am posting it here as my first post on LUBP. (aliarqam)

“پہلا دسمبر”

تمہیں بچھڑے ہوئے
پہلا دسمبرہے

کہر زدہ سی صبحیں
مہر بھی زرد رو

امیدیں اوس میں ڈھکی ہوئی ہیں
دوپہریں دھند میں لپٹی ہوئی ہیں

اور شام کے بوجھل سمے پر
سیاہی اب پہلے کی نسبت بڑھ گئی ہے

چاند بھی مدہم اشاروں میں
ستاروں کو یہی سمجھا رہا ہے

کہ ندیا نے کنارے سے
اب ترکِ تعلق کر لیا ہے

برف سی سرد مہری
ان میں حائل ہوچکی ہے۔

علی ارقم

Tumhei Bichde Hoy,
Pehla December Hai…
Kuhar Zadaa se Subhein,
Mehar bhi Zard Ru
Umeedein Aus Mey
Dhaki Hoi Hain,Dopehrein Dhund Mey
Lipti Hoi Hain,
Aur Sahm K
Bhojal Samey Par
Siahee Ab Pehle Ki Nisbat
Badh Gai Hai,
Aur Cahnd Bhi….
Madham Isharon Mey,
Sitaron Ko Yehi
Samjha Raha Hai.
K Nidyaa Ne

Kinarey Sey,
Ab Tark e Taaluq
Kar Lia Hai,
Baraf Si Sard Muhri
Inn mey Haa’il Ho Chuki Hai,