Featured Original Articles Urdu Articles

مسجد نبوی خود کش حملے پر مے لانا طاہر اشرفی کے بہکے بہکے الزامات

CnAhXIpW8AAuhex

22

12

11 12

گزشتہ ہفتے مسجد نبوی پر ہونے والے دیوبندی وہابی داعش کی جانب سے خود حملے کے بعد پاکستانی دیوبندی تکفیریوں کی بوکھلاہٹ اپنی حدوں کو چھو رہی ہے – دوسروں کے مذہب کو جھوٹا کہنے والے دیوبندی مولوی طاہر اشرفی نے خود کش حملے کے چند لمحے بعد اسے سلنڈر کا دھماکہ قرار دے دیا ، پھر تھوڑی دیر گزری تو کہا دھماکہ فوجی مشقوں کا حصہ تھا ، جب سعودی اتھارٹیز نے خود بھی اعتراف کر لیا کہ دھماکہ خود کش تھا تو بھی مے لانا اشرفی اور اس کے ہم نوا اس کو سلنڈر دھماکہ بتانے پر بضد تھے –

دوسری جانب کالعدم تکفیری دیوبندی گروہ کا سرغنہ لدھیانوی بھی اس دھماکے کو کبھی شار سرکٹ کہتا کبھی سلنڈر دھماکہ – اسکی ایک وجہ تو یہ تھی کہ خود کش حملہ اشرفی اور لدھیانوی کے کسی نظریاتی اتحادی کا ہی کام تھا – دوسری وجہ اپنے آقاؤں آل سعود کی خوشنودی حاصل کرنا تھی –

سعودی اتھارٹیز کی جانب سے اس بات کا اعتراف کہ یہ دھماکہ خود کش تھا ان دونوں تکفیری مولویوں کے منہ پر طمانچہ ہے – جس کی خفت کو اب یہ کبھی شیعہ مسلمانوں ، کبھی ایران ، کبھی حزب الله اور کبھی کسی اور پر الزام لگا کر مٹانے کی کوشش کر رہے ہیں – یہ دیوبندی منافق پوری دنیا پر الزام لگا دینگے لیکن کبھی بھی اپنے نظریاتی اتحادوں دیوبندی وہابی تکفیریوں کا نام لینے کی ہمت نہیں کریں گے