Original Articles Urdu Articles

خادمَینِ حرمین کے خُدام: -از امجد عباس

12495211_980814495346442_3534336475663754694_n

میں الحمد للہ مسلمان ہوں، خانہِ کعبہ کے حوالے سے میرا ایمان حضرت عبد المطلب والا ہے، اگر ابرہہ جیسا طاقتور ظالم اُسے کچھ نقصان نہیں پہنچا سکا تو دنیا کی کوئی طاقت اسے گزند نہیں پہنچا سکتی۔

ہاں خطرہ ہے تو سعودی شہنشاہت کو!

جی، جیسے عثمانی ترکوں کی “خلافت” حجاز سے ختم ہوگئی، اسی طرح “آلِ سعود” کی بھی ملکوکیت دَم توڑنے لگی ہے، ماضی میں “برصغیر” میں “خلافتِ عثمانی” کے بقا کی تحریک اٹھی، اب پاکستان سے “آلِ سعود” کے بچاؤ کی تحریک چل رہی ہے۔

سعودی تیل کے پیسوں نے دنیا میں آگ لگا رکھی ہے، یہاں بھی پیٹرو ڈالر اور “حج و عمرے” کی حکومتی دعوتوں کے سبب “تحفظِ حرمین شریفین” کی تحریکیں چل رہی ہیں۔

اہلِ اسلام، خاطر جمع رکھیے، اللہ تعالیٰ پر ایمان ہے تو یقین کیجیے حرمِ خدا محفوظ رہے گا۔

ہاں پاکستان کے بڑے بڑے صاحبانِ جبہ و دستار “سعودی شہنشاہت” کو بچانے نکلے ہیں، یہ تحفظِ ملوکیتِ آلِ سعود کی تحریک چلا رہے ہیں۔ اِن سب کو سعودیہ بھجوانا چاہیے کیونکہ سعودی خاندان کو اپنی عوام سے خطرہ لاحق ہے، یہ سعودی “چیلے” وہاں کی عوام سے بات کریں۔

اچھا اسلامی ریاست کا “خلیفہ” ایسا ہونا چاہیے جو جماعت بھی کروا سکتا ہو، ذرا خدا کو حاظر و ناظر جان کر بتائیے سعودی شاہ سلیمان اور اُس کا بیٹا “جماعت” کروا سکتے ہیں!!!

علماءِ کرام پہلے اِن حکمرانوں کی “داڑھی” ہی ٹھیک کرو دیں، پھر اِنہیں “خلیفہ” بنا کر، “تحریکِ خلافت” شروع کریں!!!

آلِ سعود یہی عنایات اپنی عوام پر کر لیتی تو حالات کافی بہتر ہوجاتے!!!

(تصویر میں سعودی شاہ، اُس کا فرزند اور اِن کے “چیلے” دیکھے جا سکتے ہیں۔)