Original Articles Urdu Articles

کیلی فورنیا امریکہ میں دہشتگرد حملے میں ملوث تاشفین ملک کا تعلق بدنام زمانہ دیوبندی لال مسجد سے ہے۔ خرم زکی

 

12311062_10205901662400503_5178877487189467939_n 12347843_10205901655520331_6435174813043505300_n

جی ہاں کیلی فورنیا امریکہ میں دہشتگرد حملے میں ملوث تکفیری دیوبندی دہشتگرد تاشفین ملک جو ایک عرصے سے سعودی عرب میں رہائش پزیرتھی اس کے تعلقات پاکستان کے بدنام زمانہ تکفیری دیوبندی دہشتگرد ملا عبدالعزیز اور لال مسجد سے تھے اور اس نے عالمی تکفیری وہابی دہشتگرد گروہ داعش کے ساتھ بیعت کی ہوئی تھی۔ یاد آیا کچھ ؟ کچھ عرصے قبل جامعہ حفصہ کی طالبات نے داعش کے سرغنہ ابو بکر لعنتی البغدادی کو ایک خط لکھا تھا جس میں انہوں نے ابو بکر سے اظہار وفاداری کیا تھا ۔

ان تمام باتوں کے باوجود ہمارے ملک کے سیکیورٹی اداروں، اینٹیلیجینس ایجینسیز، فوج، پولیس، رینجرز، حکومت کے کان پر جوں بھی نہہں رینگی۔ ملا عبد العزیز عرف برقعہ پوش کھلے عام داعش کے قصیدے پڑھتا رہا، خود کش حملہ آوروں کی دھمکیاں لگاتا رہا لیکن حکومت اور انتظامیہ اس کو سیکیورٹی فراہم کرتی رہی۔ کیا ملا عبد العزیز کو تحفظ بھی ڈاکٹر عاصم فراہم کر رہا ہے ؟ یا اس کی ذمہ دار ہماری حکومت اور سیکیورٹی ادارے ہیں ؟ آرمی پبلک اسکول پشاور میں معصوم بچوں، طالب علموں اور اساتذہ کو ذبح کر دیا گیا، قتل عام کیا گیا لیکن ان تکفیری دیوبندی دہشتگردوں کے خلاف جس طرح کی بھرپور کاروائی کی ضرورت تھی نہ کی گئی۔

آج بھی دارالحکومت اسلام آباد کے عین وسط میں آئی ایس آئی ہیڈ کوارٹر کے ساتھ لال مسجد میں ملا عبد العزیز کھلے عام داعش کے نظریات کی پرچار کر رہا ہے لیکن کوئی روکنے والا نہیں۔ یہ صورتحال پاکستان کے مفاد میں نہیں، اس ملک کے عوام کے مفاد میں نہیں۔