Original Articles Urdu Articles

لاہور میں مسیحیوں کا قتل اور دیوبندی ملحد کی آئیں بائیں شائیں – زالان

deob

شیعوں کو دیوبندی طالبان اور سپاہ صحابہ قتل کریں تو دیوبندی ملحدوں کے نزدیک یہ دو طرفہ فرقہ واریت ہے ، اب مسیحیوں کے قتل کا جواز بھی دے دو

سپاہ صحابہ اور طالبان کے ہمدردو، مسیحیوں پر طالبانی حملے کا بھی جواز دے دو . فرقہ واریت ، پوپ کا بیان ،عراق شام جنگ ، سازش ؟

دیوبندی ملحدو، طالبان کے شیعوں پر حملے “دو طرفہ فرقہ وارانہ ” مذہبی جنگ ہے تو مسیحیوں پر حملے کا بھی جواز لا دو

دو دیوبندی دہشتگرد ہجوم کے ہاتھو ں مارے گئے – طالبان کے ہمدردوں اور سپاہ صحابہ کے ملحدین سے تعزیت

مسیحیوں پر خودکش حملہ. شام اور عراق میں جاری جنگ اور “سپاہ مسیح ” کا رد عمل ہے – طالبان اپولوجسٹ

جو طالبان دہشتگردی پر سوگ اور نوحہ خوانی کرنے کا ڈرامہ کرتا ہے، آئیں بائیں شائیں کرتا ہے اور دیوبندی طالبان و سپاہ صحابہ کی نام لے کر مذمت نہیں کرتا اصل میں وہ طالبان کا ہی ہمدرد ہے

دیوبندی جعلی ملحدین کے مطابق چرچ پر طالبان اور اہل سنت والجماعت کے حملے کو بھی جسٹیفائی کیا جا سکتا ہے ،جیسے باقی دہشتگردی کو جسٹیفائی کیا جاتا ہے ، مثلا
یہ تو مذہبی لڑائی ہے صدیوں سے چل رہی ہے
شام اور عراق میں بھی عیسائی گروہ بن گئے ہیں جنھیں یورپ سپورٹ کر رہا ہے
عیسائی مسلمان لڑائی تو صدیوں سے موجود ہے
پوپ نے داعش کے خلاف بیان کیوں دیا ؟
کیا دیوبندی نہیں مر رہے
وغیرہ وغیرہ

“دہشتگردی کو جڑ سے اکھاڑ پھینکیں گے “- وزیر اعظم نواز شریف
اسکی جڑیں لال مسجد اوردیوبند مدارس ہیں جہاں پر کا روائی سے تمہاری پھٹتی ہے

باقی صوبوں میں پنجاب کی نمائندگی سپاہ صحابہ اور دیوبند مدارس کی شکل میں کی جا رہی ہے ، سپاہ صحابہ پنجاب کا دہشتگرد ونگ ہے

پنجاب اپنی دہشتگرد تنظیم اہل سنت والجماعت سپاہ صحابہ کے ذریعے دوسرے صوبوں میں دہشتگردی بند کرے

دیوبندی دہشتگرد تنظیم سپاہ صحابہ یا اہل سنت والجماعت اصل میں سپاہ پنجاب ہے

طالبان کا مرکز وزیرستان ہے اور اس میں اکثریت پختونوں کی ہے ، جبکہ دہشتگرد سپاہ صحابہ کا مرکز پنجاب اور اکثریت پنجابیوں کی ہے ، ایک کے خلاف کاروائیاں اور دوسرے کو آزاد چھوڑنے کی وجہ لسانی تعصب بھی ہو سکتا ہے

سپاہ صحابہ /اہل سنت والجماعت والے اپنے “گرائیں ” ہیں ان سے پختون طالبان جیسے سلوک نہیں ہوگا

شہباز شریف نےڈیل بھی کی تھی کہ طالبان باقی صوبوں میں دھماکے کریں گے پر پنجاب میں نہیں ، یہ کون سا باغی گروہ بن گیا کاروائی کرو

اگر دیوبندی دہشتگرد کا تعلق پنجاب سے ہوگا تو وہ ریاست ،میڈیا اور فوج کے نزدیک ” ممتاز عالم دین ” ہوگا ،احمد لدھیانوی اور طاہر اشرفی کی طرح

مسلہ مذہب اور فرقہ واریت نہیں بلکہ دیوبندی اور وہابی دہشتگردی ہے ، یہ نہ ہو تو ملک میں کوئی مذہبی دہشتگردی نہیں

طالبان نے مسیحیوں پر حملہ کر دیا ؟ طالبان کے حمایتیو ، سپاہ صحابہ کی حمایتی لبرلز ! کوئی بات نہیں گوگل کرو اور مسیحی دہشت گردی اور عیسائی سازش ڈھونڈو ، یہ جواز دو کہ عیسائی بھی تو ایسے ہی عسکریت پسند ہیں جیسے طالبان اور داعش ، طالبان کو جسٹیفائی کرو ، اور کہو “ہم تو انصاف کی بات کر رہے ہیں ،
شاباش بے غیرت بن کر دہشتگردی کو جسٹیفائی کرو اور اسے دو طرفہ مذہبی جنگ قرار دے کر اپنے طالبان بھائیوں کو بچاؤ

فوج کی نظر میں دہشتگرد صرف وہ ہے جو فوج پر حملہ کرتا ہے، باقی شیعوں ، مسیحیوں اوردوسرے فرقوں کو مارنے والےدیوبندی دہشتگرد نہیں ہیں

یہ جتنی دہشتگردی ہے – دیوبندی ہے ، دیوبندی ہے


1
trust

2

3

4

5

6bomb

7

الحاد کا لبادہ اوڑھ کر تکفیری دیوبندیوں کی وکالت کرنے والے فخرِ دو نمبر ملحدینِ جہاں، جناب علامہ ایاز نظامی کی خدمت میں ایل یو بی پی کا ایک حقیر نذرانہِ عقیدت

db

About the author

SK

1 Comment

Click here to post a comment
  • Khurram Zaki said:
    مسیحی برادری نہ 10 محرم کا جلوس نکالتی ہے اور نہ ہی تبرا کرتی ہے، اب کوئی پوچھے کالعدم دہشتگرد انجمن سپاہ صحابہ اور تحریک طالبان سے کہ ان کو کیوں قتل کیا اور کوئی پوچھے ان کالعدم تکفیری دہشتگرد گروہوں کے حمایتیوں سے کہ مسیحی برادری پر حملے کو کیسے جسٹیفائی کرو گے ؟