Original Articles Urdu Articles

جھرلو 2013 – الیکشن کمیشن کے سابق سیکرٹری محمد افضل خان کے الزامات: ایک ذاتی تجربہ – تنویر اختر

214286153fa361cd3c28

افضل خان قذافی، سابق ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن .. بے شک مردہ بولا کفن پهاڑ کے، لیکن کافی سے زیادہ “سچ” بول گیا .. جی ہاں، یہ سوال اپنی جگہ کہ خان صاحب کا “سچ” اب تک سات پردوں میں کیوں چهپا رہا اور توسیع نہ ملنے پر ان نازک ترین لمحات میں ہی اچانک کیونکر سامنے آگیا؟. خود مجهے موصوف کے ساته اس وقت کام کرنے کااتفاق ہوا جب آپ اکرم خان درانی کی صوبائی حکومت میں خیبر پختونجواہ (اس دقت صوبہ سرحد) میں بحیثیت صوبائی سیکرٹری اطلاعات تعینات تهے اور بندہ پشاور میں ایک بہت بڑی ایڈورٹائزنگ ایجنس کے ریجنل ہیڈ کے فرائض انجام دے رہا تها .. پیشہ ورانہ فرائض کی انجام دہی کیلئے قذافی صاحب سے جتنا واسطہ رہا، اس کی روشنی میں، میں پوری ذمہ داری سے کہہ سکتا ہوں کہ آپ اگر ہارون الرشید کی رائے کے مطابق “فرشتہ صفت” نہیں ہیں تو مجیب الرحمان شامی کے فتوے کے مطابق “شیطان بهی بہرحال نہیں ہیں .. 2013 کے متنازعہ ترین انتخاباٹ کے حوالے سے اس وقت کے ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن کی جانب سے افتخار چودهری، ریاض کیانی، تصدق جیلانی اور فخرو بهائی جیسے “فرشتوں” پر عائد تمام عمومی الزامات کی تائید کے بعد ان “جهرلو” الیکشنز کے نتیجے میں وزیراعظم “منتخب” ہونے والے شہہنشاہ معظم کے پاس اپنی سیاست اور رہا سہا وقار بچانے کیلئے مستعفی ہونے کے سوا، سچ پوچهئے تو اب آپشن بچا کوئی نہیں … اگے تیرے پاگ لچهئے …

*************

 

انتخابات میں دھاندلی ہوئی، سابق ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن کا الزام

سابق ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن محمد افضل خان نے الزام عائد کیا ہے کہ الیکشن ٢٠١٣ میں دھاندلی کی گریٹ گیم میں سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی بھی شریک تھے، افتخار محمد چودھری بھی دھاندلی میں ملوث ہیں۔

اسلام آباد: (دنیا نیوز) سابق ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن محمد افضل خان نے 2013ء کے انتخابات میں دھاندلی کے الزامات پر مہر ثبت کرکے سیاسی ماحول ایک بار پھر گرم کر دیا ہے۔ ایک نجی ٹی وی کو انٹرویو میں محمد افضل خان نے انکشاف کیا ہے کہ جسٹس (ر) ریاض کیانی نے الیکشن 2013ء کو تباہ کیا۔ جسٹس (ر) ریاض کیانی کا الیکشن کو تباہ کرنے میں 90 فیصد ہاتھ ہے۔ 2013ء کے انتخابات میں 35 نہیں سیکڑوں پنکچر لگائے گئے۔ الیکشن میں عوام کا مینڈیٹ چوری ہوا۔ پہلے مجھے اس بات کا شک تھا کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی، اب یقین ہے۔ محمد افضل خان کا کہنا ہے کہ گریٹ گیم میں سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی بھی شریک تھے جبکہ افتخار محمد چودھری بھی دھاندلی میں ملوث ہیں۔ اگر یہ لوگ دھاندلی میں ملوث نہ ہوتے تو 4 حلقے کھول دیتے۔ دھاندلی کی شکایات والے کیسز کو جان بوجھ کر طوالت دی گئی۔ الیکشن کمیشن کے بجائے سابق چیف جسٹس نے ریٹرننگ افسروں کو تعینات کیا۔ سابق چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم نے آر اوز کی درخواست دے کر افتخار محمد چودھری کو بچایا۔ فخرو بھائی نے آنکھیں بند کر لی تھیں، انہیں نوٹس لینا چاہیے تھا۔

http://dunya.com.pk/index.php/taza-tarian/2014-08-24/233928

دیگر ذرائع کے مطابق سابق ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن افضل خان نے عام انتخابات 2013ء میں دھاندلی کی تصدیق کرتے ہوئے اہم انکشافات کئے ہیں جبکہ ان کا کہنا تھا کہ اس دھاندلی میں سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری سمیت سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی بھی ملوث تھے جب کہ چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم کام کرنے سے خوف زدہ تھے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام کھرا سچ میں میزبان مبشر لقمان کے ساتھ خصوصی انٹرویو میں سابق ایڈیشنل سیکرٹری الیکشن کمیشن نے کہا کہ الیکشن کمیشن اور عام انتخابات 2013ء کو جسٹس (ر) ریاض کیانی نے تباہ کیا، انتخابات میں انتہائی منظم طریقے سے دھاندلی کی گئی، پہلے دن سے الیکشن میں دھاندلی کا شک تھا لیکن اب یقین ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریٹرننگ افسران کو سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے الیکشن کمیشن میں تعینات کیا جبکہ یہ کام الیکشن کمیشن کا تھا اور فخرالدین جی ابراہیم نے سپریم کورٹ کو ریٹرننگ افسران کی تعیناتی کے لئے درخواست بھیج کر افتخار محمد چوہدری کو بچایا۔

افضل خان کا کہنا تھا کہ الیکشن میں 35 نہیں بلکہ سینکڑوں پنکچر لگائے گئے، پنجاب میں نگران وزیر اعلی نجم سیٹھی کی نگرانی میں بہت بڑے پیمانے پر دھاندلی کی گئی کیونکہ فخر الدین جی ابراہیم کام کرنے میں خوف زدہ تھے اور انہوں نے آنکھیں بند کرلیں تھیں جبکہ انہیں اس تمام صورتحال کا نوٹس لینا چاہئے تھا۔ افضل خان نے کہا کہ جنگ گروپ کے جیو ٹیلی ویژن نے دھاندلی میں بالواسطہ کردار ادا کیا اور نواز شریف کی الیکشن مہم چلائی اور ِانجنیئرڈ نتائج کا قبل از وقت اعلان کیا انہوں نے کہا کہ الیکشن میں عوام کا مینڈیٹ چوری کیا گیا، جس کو جہاں موقع ملا اس نے دھاندلی کرائی، جس میں سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری، سابق چیف جسٹس تصدق حسین جیلانی سمیت جسٹس (ر) خلیل الرحمان رمدے بھی ملوث تھے جبکہ جہاں جہاں کیمرے لگائے گئے تھے وہاں دھاندلی نہیں ہوئی۔ ان کہنا تھا کہ چوہدری نثار علی کو کس طرح پتہ چلا کہ ہزاروں ووٹ ناقابل تصدیق ہیں جبکہ سارے ووٹ سیل ہوتے ہیں، عمران خان انتخابی دھاندلی سے متعلق سچ بول رہے ہیں۔ سابق ایڈیشنل سیکریٹری نے کہا کہ الیکشن ٹریبونلز بھی سمجھوتے کر رہے ہیں، ووٹوں کی تصدیق زیادہ سے زیادہ 7 دن میں ہوسکتی ہے لیکن 60 دنوں میں نمٹائے جانے والے کیسوں کو 365 دن میں بھی حل نہیں کیا گیا اور دھاندلی کی شکایت کے کیسز کو جان بوجھ کر لمبا کیا گیا، الیکشن کو 14 ماہ گزر چکے ہیں، اگر یہ لوگ ملوث نہ ہوتے تو اب تک حلقے کھولے جاسکتے تھے۔ افضل خان نے کہا کہ میں بھی کسی حد تک قوم کا مجرم ہوں جبکہ دھاندلی میں جو بھی ملوث ہے اس پر آرٹیکل 6 کا مقدمہ چلاکر پھانسی دی جائے۔

http://www.islamtimes.org/vdcdz90onyt0zk6.432y.html

election officials

About the author

SK

3 Comments

Click here to post a comment
  • Awab Alvi said:

    Many debating on Afzal Khan issue
    – Question – waak accusations? Whatever be the accusations – it is now up to the judicial commission to unearth the problems – this is what whistleblowers do, expose, once exposed then a society with the will to fix the system needs to diligently protect the whistleblower and fix the system
    – Question – why after a year? Whistleblowers will always await for the right circumstances before taking the leap of faith, whistleblowers will always be attacked by the status quo for the fear it may expose a longer trail of events. Case in point – Ch Iftikhar remained silent under Musharraf for over Eight years before he finally confessed all against the dictator.
    Consider Afzal Khan a whistleblower only, a person deep within the system opens a full can of worms…. if even 50% of his facts stand correct …. Houston We Have a Problem

  • Basit said:

    CYCLOPEAN ELECTION RIGGING
    MAIN ARCHITECT: THE SHAMELESS IFTIKHAR CHAUDHRY
    Former Additional Secretary Election Commission of Pakistan (ECP) Afzal Khan has said that former Chief Justice Iftikhar Muhammad Chaudhry had appointed returning officers (ROs) for the election duties. Former bureaucrat revealed that there was massive corruption and rigging in the 2013 general elections. He alleged that the Chief Justice interfered in the process of free and fair elections to result in the present regime illegitimate rule. He said, there weren’t only 35 punctures rather there were more than hundred. Former Additional Secretary ECP informed that former Chief Justice Iftikhar Mohammad Chaudhry deployed returning officers (ROs) although it was not his domain. He said election commission is responsible for the deployment of ROs. He said bogus voting was carried in all constituencies except with those having cameras installed like Islamabad adding that the people’s mandate was stolen in the elections. Accusing Justice Riaz Kiani of being directly involved in rigging elections in Punjab, Afzal Khan said that he rigged 90 percent of last year’s general elections and he was directly appointed by current Prime Minister Mian Muhammad Nawaz Sharif while the PM also interfered in the appointment of Election commissioners of Balochistan and Sindh. Afzal Khan claimed that votes can be verified in seven days while here in this corrupt system a verification case which can be solved in 60 days was not solved even in 365 days.
    2013 elections represent a model case of unlawful interferences persist in electoral process. No doubt Imran has been making a meal of the verdict, because the contemptible practices turned out to be too costly to the PTI. The PPP may have also suffered.
    https://www.youtube.com/watch?v=1kq5rnCDhA0

  • Moeed Pirzada said:

    With thanks to Mr. Omer Riaz on this page – apart from giving a plausible overview of what happened in Elections 2013 – this is also hilarious with suggested titles in the end – but it does not mean that it all may have happened the way it is suggested by Omer Riaz – a discussion on this “Rigging plan of Elections 2013” may bring us closer to truth
    Election 2013 – The juggernaut.
    1. PML-N, PPP agree to appoint their own provincial members of EC
    2. Iftikhar Chaudhry/Khalil Ramday appoints ALL returning officers
    3. ALL presiding officers appointed by Secy Education of Ex-Punjab govt
    under Najam Sethi
    4. Ballot papers PRINTED in private presses
    5. Fake ballot papers distributed to peripheries and closely contested
    constituencies
    6. Upto 800% votes cast in some rural constituencies. Most sub urban polling
    stations polled above 90% votes while national average was 56% with 62%
    in urban centers.
    7. Geo-Judiciary Nexus. Mir Shakil’s channel was tasked to counter any
    allegations.
    8. Chairman NADRA’s daughter harassed by PML-N goons and multiple
    cases framed against him as evidence of 1000s of unverifiable votes
    started pouring in.
    8. Why was mostly Punjab affected?
    Ans: Because thats where PML-N has a provincial govt for last 5 years
    and they appointed and managed all presiding officers and ROs.
    9. Magnetic ink was deliberately not issued to make the verifiability issue a
    plan B. Surprisingly no persons have been blamed or punished for the
    absence of this ink.
    10. A nincompoop like Fakhru Bhai was appointed to oversee elections who
    sat with COAS for 3 hrs and failed to identify his august guest.
    11. Riaz Kiyani, the man who acted as deputy CEC in Islamabad as Fakhru
    stayed at Khi and oversaw all the details
    12. The law officers were hired for election tribunals by Punjab Govt and are
    all contract employes
    13. Vote recount fee was set at Rs 15/vote which means millions of rupees
    just for recounts
    Players.
    1. Asif Zardari & Nawaz Sharif, the evil twins
    2. CJ Iftikhar Ch, the liar
    3. His henchman, Khalil Ramday, the corrupt
    4. Fakhru Bhai, the idiot
    5. Riaz Kiyani, the villain
    6. Election Tribunals, the pantomime
    7. Mir Shakil ur Rehman, the trumpeteer
    Post Note.
    A loss of faith in election process by 1000s of Pakistani youth can only lead to their conversion to more zealous and extremist ideologies or a total indifference. What a shame!