Original Articles Urdu Articles

نجدی وہابیوں کا کربلا پر حملہ – تاریخ کے آئینے میں

tumblr_maxxkewugk1rste5to1_500

اسلام کی حالیہ تاریخ میں وہابی نجدیوں کا کربلا پر حملہ یقیناً ایک سیاہ باب کی حثیت رکھتا ہے اٹھارہ سو دو میں ہونے والے کربلا پر حملے کے بارے میں مسلمانوں کی ایک بڑی اکثریت لا علمی کا شکار ہے جس پر سے پردہ اٹھانا موجودہ حالت کے تناظر میں بہت ضروری ہے  کہ جب اسلام کا لبادہ اوڑے تکفیری وہابی اور دیوبندی گروہ مساجد ، انبیا و اولیا کے مزارات پر حملہ کر کے انھیں زمین بوس کرنے میں مصروف ہیں –

یہاں اس بات کی وضاحت ضروری ہے کہ اس وقت کے وہابی نجدی بھی موجودہ تکفیری وہابیوں کی طرح دولت و اقتدار کی لالچ کے ساتھ ساتھ تکفیری خیالات سے متاثر تھے جیسے آج کل کے تکفیری دیوبندی اپنے متشد نظریات کے پرچار کرتے ہوے دہشت پھیلا رہے ہیں –

اٹھارہ سو دو میں محرم کے مہینے سے پہلے کربلا میں ہونے والا قتل عام ایک سیاہ باب کی حثیت سے وہابی نجدی سامراج کے سیاہ چہرے سے پردہ اٹھاتا رہے گا جب کربلا میں دنیا بھر سے محرم کے لئے جانے والے مسلمانوں کے خون سے زمین کربلا کو رنگین کیا گیا – اس بارے میں تاریخ میں دو گواہیاں ملتی ہیں – ایک فرانسیسی غیر مسلم چشم دید گواہ اور دوسرا ایک وہابی پراپنگنڈہ مشین کا سرغنہ –

جے بی راو سو کے مطابق وہابی درندگی کی اس سے بڑی مثال نہیں مل سکتی جس میں انہوں نے مزار امام حسین پر حملے کرنے کے بعد وہاں موجود مال و اموال لوٹ لیا جس میں سالوں سے مزار کو عطیات میں ملنے والے سونے چاندی کے لاکھوں سکے اور مقدس مذہبی اشیاء کو لوٹ لیا گیا – بر صغیر سے نادر شاہ کے ہاتھ لگا قیمتی سامان بھی امام حسین مسجد سے وہابی نجدیوں نے لوٹ لیا اور وہ یقیناً اس لوٹ مار کی منصوبہ بندی ایک لمبے عرصے سے کر رہے تھے جس کے لئے وہ ہمیشہ سے سوچتے چلے آرہے تھے کہ کربلا کی دولت کو لوٹ کر وہ اپنے خواب پورے کر سکیں –

اور پھر وہ دن آگیا جب بارہ ہزار کے لگ بھگ وہابی نجدیوں نے کربلا پر حملہ کیا اور بوڑھے جوان عورتیں اور بچے سب ان کی خون کی پیاسی تلواروں کا نشانہ بن گیے یا وہابی نجدیوں کی طرف سے لگایی گیی آگ میں جل کر شہید ہوگے – اور یہ بھی کہا جاتا ہے کہ ایک حاملہ عورت کو قتل کرنے کے بعد اس کے شکم سے بچے کو نکال کر شہید کرنے کے بعد ماں کے جسم پر ڈال دیا گیا – تقریبن چار ہزار لوگوں کو موت کے گھاٹ اتارنے کے بعد بھی ان درندوں کی پیاس نہیں بجھی اور انہوں نے چار ہزار اونٹوں پر لوٹا گیا اموال لاد کے کربلا کو خون کے دریا میں تبدیل کر کے واپسی کا سفر باندھا – مزار کے گمبند اور میناروں کو بھی اس لالچ میں منہدم کیا گیا کہ شاید یہ سونے کے بنے ہیں 

ایک اور بیان جو وہابی تاریخ دان عثمان بن عبد الله البشیرنے لکھا ہے بھی اسی قسم کے حالات بیان کرتا ہے – اٹھارہ سو دو میں ابن سعود نے کربلا کی جانب سفر شروع کیا جس میں اسے اونٹوں پر لدے نجدی قبیلے کے افراد کی بڑی مدد حاصل تھی اور انہوں نے کربلا پہنچنے پر ایک بہت بڑی تعداد کو قتل کر کر گھروں اور مکانات تک کو تباہ کر دیا – امام حسین کے مزار کے گمبند کو بھی شہید کر دیا – مزارات اور قرب و جوار میں موجود ہر چیز کو لوٹ لیا گیا ، سونے چاندی ، زمرد اور ہیرے جواہرات سے مزین چیزوں کو لوٹ کر اپنے خزانے میں شامل کر دیا گیا – اور اس سب کے بیچ میں لگ بھگ دو ہزار لوگوں کو قتل کیا گیا – اس دور کے مزید سورسز نے بھی اسی قسم کے حالات کو بیان کیا گیا لیکن ایک بات اہمیت کی حامل ہے کہ وہابی تکفیریوں کی درندگی کے ساتھ ساتھ دولت کی ہوس اور مزاروں کو تباہ کرنے کی روایت ان کے ساتھ ساتھ ہی چلی ہے – سعودی خاندان کے اقتدار سنبھالنے کے بعد جنت البقی اور جنت المعلی کو بھی زمین بوس کر دیا گیا –

About the author

Shahram Ali

5 Comments

Click here to post a comment
  • Ye Najdiun , Wahabyuin ka Islam, Hazrat Muhammad (Salah la hu alai hi Wasalam aur aap k ashaab (R.A), All e Rasuol ( Rizwan ullah ajmaain) k khilaff anaddar ka bughz hai jo ye sab chezzoun ko mitta kar nikaal rahy hain. Brothers in k zehreely Progenda sy bachu. Allah Taala Hamin aur aap ko seedhi raha dekhay. Aameen

  • muhtarm shahram sb yeh mazarat ki shahdat ka bani ap ka mazhab ka shah ismail safvi he jis ne chudhavin sadi main na sirf iraq main sheikh abdul qadir jillani or degar muqadas sunni haasatiun k mazarat ku shaheed kiya balk sunni ulma ka bedaraigh qatal aam b kiya or iran ju aik sunni state the bazoor taqat shia state main change kiya. wiki pedia main shah ismail likhain or tareekh ka wo siyah door b daikhain or iman dari ka sabot dete hue us p b artical likain. or jnab deo bandi tb tu the hi ni ap apna bughz q nikal rahe heain

  • Reply@Umair, I am so sorry to read your post, which shows that how sick minded you are. Our Shia Muslim brothers are telling their atrocities. If you can’t sympathize, then please don’t say anything bad about anyone. Unless your forefathers were involved in these atrocities. Which I understand you must belong to blood thirsty ASW group. While we (Hanafi) should be called ASW. Since you have hijacked this name to make other people fool, you have failed. We are the true ASW, not you or your Wahabai (Takfiri) ideology. Your king of Saudi Arabia is helping Israel. What else you want to hear.

  • It must be potted in well draining soil, preferably mixed
    using a bark or moss and even sand which enables promote proper draining.

    This article explains in simple terms the working of the main parts with
    the Gas Turbine.
    None with the bamboo plant care tips with this article will sign up
    for Lucky Bamboo. If you live inside right climate you are able to
    grow it within your garden, but I wouldn’t suggest trying to cultivate
    and make reeds yourself yourself, even though some fanatics
    do.

    Thinking of some creative writing ideas for kids can actually be
    described as a time consuming task, you must make sure that kids love to write
    down on the topics which you’ve got chosen for the children. Choosing something which others can understand will
    either get them to laugh or get them to angry. had – https://harportconsulting.zendesk.com/entries/34832195-One-Word-Phytolacca-Berry-Tablets-Price, phytolacca decandra This
    does not mean that you just have to copy those
    authors’ works when writing a novel – you just ought to
    learn at their store for you to definitely make your personal
    love story more easily. Most of you imagine that an essay
    should be done in a single time, which can be
    not the real case.