Featured Original Articles Urdu Articles

مندر کی زمین پرغیر قانونی قبضہ کرکے مدرسہ تعلیم القرآن، دیوبندی مسجد اور مدینہ مارکیٹ راجا بازار پنڈی میں تعمیر کئے گئے – روزنامہ ڈان کی رپورٹ

temple

راولپنڈی- راجا بازار میں واقع دیوبندی مسجد، مدرسہ تعلیم القرآن اور مدینہ مارکیٹ جو کہ 10 محرم الحرام کو نامعلوم افراد کی طرف سے جلادئے گئے تھے کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ یہ متنازعہ زمین پر تعمیر کئے گئے تھے-زمین متروکہ املاک بورڑ کی ملکیت ہے

متروکہ املاک بورڑ کے ایک اہلکار نے انگریزی اخبار ڈان سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ مسجد، مدرسہ پاکستان بننے کے بعد تعمیر کئے گئے اور یہ تعمیر ایک مندر سے ملحقہ زمین پر کی گئی

http://www.dawn.com/news/1076670/raja-bazaar-mosque-seminary-were-built-on-disputed-land

Screen Shot 2013-12-27 at 12.35.17 PM

  فوجی آمر جنرل ضیاءالحق کے کہنے پر متروکہ املاک بورڑ نے مندر کی زمین کا ایک حصہ اور مدرسہ انتظامیہ کے حوالے کردیا جس سے مدرسے کی عمارت اور پھیل گئی

مندر کی پراپرٹی پر خسرہ نمبر یو-1310 اور 1310یو/اے پر مدینہ مارکیٹ کے نام سے 103 دکانیں تعمیر کی گئیں اور جبکہ 22 مزید دکانیں خسرہ نمبر 1330 یو اور 1331یو پر تعمیر کی گئیں تھیں

مندر کی زمین پر قبضہ کا یہ ایشو 1985ء میں اس وقت کے وفاقی سیکرٹری برائے مذھبی امور کے سامنے اٹھایا گیا تھا جو اب تک حل نہیں ہوسکا

محکمہ متروکہ املاک بورڑ یہ تسلیم کرتا ہے کہ وہ اتنی زمین پر اس قبضے کے خلاف اس وقت کے آمر جنرل ضیاءالحق کے قابضین کے ساتھ گہرے تعلقات اور رشتوں کی وجہ سے خاموش رہا اور بعد میں قابض گروہ زبردست مذھبی طاقت اور پرتشدد قوت کا حامل ہوگیا تو اس کے خوفناک رد عمل کی وجہ سے کوئی آواز نہیں اٹھائی گئی

جس وقت مسجد،مدرسہ اور مارکیٹ کو جلایا گیا تو ریسکیو حکام نے آگ والی جگہ جانے کے لیے ہملٹن روڑ والی سائيڈ سے پلازہ کی عمارت کو توڑا تو عمارتوں میں گھرے مندر کے آثار واضح ہوگئے تھے

ہندؤ کمیٹی کے جگ موہن اروڑا کا کہنا تھا کہ انہوں نے اس مندر کا کبھی دورہ نہیں کیا کیونکہ یہ عمارتوں کے اندر چھپا ہوا تھا اور ان کا یہ بھی خیال تھا کہ یہ مندر بھی گرادیا گیا ہوگا کیونکہ 1992ء میں بابری مسجد کے واقعے کے بعد پنڈی میں 15 مندر گرائے گئے تھے

متروکہ املاک راولپنڈی کا کہنا ہے کہ اس کی ملکیت میں دو رہائشی عمارتیں اور 6 کمرشل یونٹ ہیں جن میں مدرسہ،مسجد اور کپڑے کی مارکیٹ شامل ہے

مدرسے اور مسجد اور کلاتھ مارکیٹ کا مقدمہ 1985ء سے چل رہا ہے اور یہ اب فیڈرل سیکرٹری کے پاس زیر التواء ہے

متروکہ املاک بورڑ کے اسسٹنٹ سیکرٹری آصف خان کا کہنا تھا کہ مسجد،مدرسہ اور مارکیٹ متنازعہ ہیں

مدرسے کے نگران مولوی اشرف علی کا کہنا ہے کہ جب پاکستان بن رہا تھا تو ہندؤں نے ہندوستان جانے سے پہلے زمین ان کے والد مولوی غلام اللہ خان کے حوالے کرگئے تھے –ان کا کہنا ہے کہ اگر بدنیتی ہوتی تو مندر کیوں باقی رہتا

یاد رہے کہ مولوی غلام اللہ خان جوکہ دیوبندی تکفیری اور خارجی خیالات کے حامل تھے اور وہ جنرل ضیاءالحق کے اسی طرح سے بہت قریب تھے جیسے مولوی عبداللہ قریب تھے جن کو اسلام آباد میں سی ڈی اے کی جگہ پر قبضہ ضیاء الحق نے کرایا تھا اور مولوی غلام اللہ خان کو بھی آمر ضیاءالحق کی قربت نے زبردست مالی فائدہ پہنچایا اور مندر کی زمین پر قبضہ کرنے میں مدد دی

gula

افغان جنگ کے دوران جنرل ضیاء الحق نے اسلام آباد،راولپنڈی اور دیگر شہروں میں تکفیری خارجی دیوبندی فکر کے حامل مولویوں کو سرکاری زمینوں پر قبضے کرکے مسجدیں اور مدرسے تعمیر کرنے کی اجازت دی اور یہ سلسلہ بعد میں بھی جاری رہا جس سے تکفیری دیوبندی خارجی گروہ بہت طاقتور ہوا اور پاکستان میں فساد فی الارض کے قابل ہوا

آج یہ گروہ ریاست کی رٹ کو چیلنج کرنے میں سب سے آگے ہے-اس گروہ نے چہلم امام حسین علیہ السلام کے موقعہ پر فیض آباد میں جس کھلی دھشت گردی کا مظاہرہ کیا اور ریاست کو چیلنج کیا اس سے بھی ظاہر ہوتا ہے کہ یہ تکفیری دھشت گرد گروہ اپنے آپ کو ناجائز وسائل کے زریعے کس قدر طاقتور سمجھنے لگا ہے

مسلم لیگ نواز کی صوبائی حکومت متروکہ املاک بورڑ کی زمین پر قابض گروہ کو نہ صرف ان کے نقصان کے ازالے کے نام پر اربوں روپیہ ادا کرنے کا فیصلہ کرچکا ہے بلکہ اس متنازعہ زمین پر نئی تعمیرات کراکر قبضے کو قانونی شکل بھی دینا چاہتی ہے

 تعمیر پاکستان ویب سائٹ نے جب یہ سانحہ رونما ہوا تھا تو اسی وقت یہ نشاندہی کی تھی کہ یا آگ تکفیری خارجی دیوبندیوں نے خود لگوائی ہے اور اس کا ایک مقصد تو مسجد اور مدرسے کے نیچے بنی ہوئی دکانوں کے کرائے مرضی سے لینا ہیں گویا دو ناجائز قابضین کے درمیان جھگڑے کا یہ شاخسانہ تھی

https://lubpak.net/archives/291807

https://lubpak.net/archives/291901

About the author

Aamir Hussaini

16 Comments

Click here to post a comment
    • chalo maan lety ahen k khabar jhooti hy magar kya namaz us jagha py hoti hy jo kabiz ho ya kisi ko pasay deye bhgair zameen pr madarsa banaya jaye or high figh socities men 1000 sy 2500sq yards kr masjjid madarsa jo intha e mahngy illaky hen ye pasay kahan sy aaty hen is makhsoos toly k pass ye future fighting pickets hen jo aagy chal k masjjide zarar ka kaam sar anjam dengy abi be waqt hy k inko pehchan lo ye sham ki tarha pakistan me b is tarha ka mahool peda krny ja rhy hen hum is tafriki group ki muzamat krty hen. labaik ya rasool ul laah saws.

  • hahaha… Bayaan deny waly ki haalat qaabil e reham he, safon men beth ky aag nhi lagayi jati, sb janty hen k aag kesy lagi, , , , or jahil itnaa he k usko ye b pata nhi he k ye madrassa 1942 se qaayem he , or phr baat samajh se bahir he k tum logon ko genrals se nafrat q he, jamhoori hakoomton ne b to pakistan kahin ka nhi chorha he… Jamhoori hakoomton ne b to logon ko boht kuch diya he,wo b saamny le aayen.

  • دیوبندی اسلام کا بدنما داغ ہیں۔
    ان لوگوں کے بغیر اسلام کتنا خوبصورت ہے۔

    • janab dil mein bughz rakh k analysis na kten. Hazoor SAWS k zamanay mein us masjid (masji e Zarrar) ko dhaaa dia gaya tha q k wo fasad phelanae ka subab bun rahi thi. zara tareekh ka mutala kr lain. zahir hai k Hazoor SAWW k intiqal ko abhi 50 years huai thay aur un k nawasay ko Karbala main ko be dardi se qatal kia aur un k gharan (yani Rasool SAWW) ki nawasion k be parda bazaroon mein phiraya gaya aur darbaroon mein mazaq urraya gaya. (aisa kren k Jammat islamai k baani Hazrat Molana Modudi RA ki kitab “Khilafat o Mulookiat hi parrh lain, takey kuch ilm jasil ho, dekhiay, kisis ki nafrat mein haq ko haq na kehney se aap qayamat mein Hazoor ko kia face dekhaen gay, lekin aap k jadde amjad “yazaad” ne na sochs to aap kia sochen gay) apne aap ko saheeh rastay pe daliay warna aisa kijay k Saudi Arab k chape huay Quran ko parrh lain aur us me Ayae Tatheer ka tarjuma uss mein parrh lain to aap pe khud haqeeqat ashkara ho jae gi, saheeh tareek ko parrh k tajzia kijay) tareekh itni bbigarri gaey hai jis ka aap tasawuur nahin kr sakte,Example, Hazrat Ali k father, yani Hazrat Abu Talib KO KAFIR (MAAZ ALLAH) jis ne Hazoor SAWW ka nikah parrhaya, zara uss nikah ki ibarat ko parrh lain tou maloom ho jaey ga. chalte chalte aik aasan se baat keh daloon, zara Molana Shibli Nomani ki kitab parrh lein jis mein Hazrat Umer ki bivi ka nam Umme Kulsoom tha, jo Jarul ki beti thi magar hamaray jahil usey Hazrat Fatima ki beti keh kr doosray ko gali dene ki liay kehtay hain, ye buhz hai k nafrat mein haqaeq ko maskh kr do. main ne chan cheezein jo bilkul aam fehem hain likh dein, aap inhi ki roshni mein zraa tajzia kijiay ga. I agree with Mr. Javed’s views regarding SSP which added sunnat waljamaat name to fool general people, otherwise We ahle sunnat (barelvi) love ahlebait and consider it a part of our imaan.

  • Dayo Bandi, Wahabi, Salfi are extemist groups. These shoud be banned and all the mosques and madrisas in their control should be taken by Government Departments. These are extremist groups. Just have a look on BANNED GROUP OF SIPAHE SIHABA, it has changed its NAME to EHLESUNNAT WAL JAMAAT to just make common people fool by the new name taken from brailvi sect, who are using this name from centuries and they are genuine EHLESUNNAT.
    Government, civil society, NGOs and general publich should come ahead and work on this very important issue.
    Gen. Zia Ul Haq is THE WORST SPOT at the face of this country. He is the most dirty man in the history of Pakistan. He is the icon and front man behind sectariasm war in Pakistan. May he get all the punishment there for these sins he has committed and put our peaceful nation on fire.

  • DAYO BANDI, WAHABI, SALFI, NAJDI, AHLE-HADITH, SIPAHE-SAHABA, TEHREEK E TALIBAN all are extremist people and making innocence of our Pakistan fool.
    The only most PEACEFUL SECT to whom I love and like being a neutral person, is BRAILVI SECT, the only peaceful and very correct sect, in the universe Alhamdolillah. Whole Muslim Ummah is proud of Brailvi Sect.
    May Allah help all extremist to understand religious. Aameen.

  • Allah ki qasam yai deoband aour ahle hadis is dunia say chlay jaien tou dunia mai sakoon ho jayega aour zia-ul-haq k iraday Allah janta tha k yai jin ko masjidon pr qabzay krwayega wo sirf aour sirf khudkush tyar krain gae ise liyae zial-ul-haq k totay hwae thae

  • Asal dusman ko pehchano jo ke hum logon main eik doosray ke liyay nafrat paida karwa rahe hain. Muslim all ovrr world are facing same problems. Iraq, Syria,Lebanon or Egypt sub taraf tabahi hay. Apne asal dushmanon ko hum bhool gayay hain or aapas main dusmanian bana li hain. Yeh log jo be gunah logon ko shaheed kar rahe hain dono taraf yeh woh zameer farosh.hain jinhon ne apna zameer baich diya hai na in ka koi iman hay na deen.

  • MERA TAMAM MUSALMANO SAY YE SAWAL HAI K KIA KISI GHASBI JAGA PER MASJID BANANA JAIZ HAI? KIA AISI MASJID MAI NAMAZ PARHNA JAIZ HAI? MERA KHAYAL HAI K AISI MASJID MAI NAMAZ PARHNA JAIZ NAHI HAI.

  • Assalamu alaikum wa rehamtullahi wa barakatuh. In 1965 war between Pakistan and India, I was student in Rawalpindi. The Masjid and Madina Market was already there and Maulana Ghulam Ullah Khan was Khateeb of the Masjid at that time and he raised millions of Rupees to support Pakistan Government in its war efforts. General Zia came to power after 12 years in 1977. The dates mentioned in the newspaper report does not make sense to me. It is sad the our journalists can easily tell lies but does not have courage to tell the truth to the people.