Featured Original Articles Urdu Articles

سیف اللہ خالد! کالعدم دہشت گرد جماعت کی حمایت میں اتنی نہ بڑھا پاکی داماں کی حکایت

sk

سیف اللہ خالد روزنامہ امت کراچی میں مستقل کالم لکھتے ہیں-اس مرتبہ انہوں نے کالعدم دہشت گرد جماعت سپاہ صحابہ نام نہاد اہل سنت والجماعت صوبہ پنجاب کے سرپرست اعلی مولانا شمس معاویہ کے قتل پر قلم اٹھایا ہے-مولانا شمس معاویہ پر قلم اٹھاتے ہوئے انہوں نے اس بات کا ثبوت دیا کہ وہ صحافت کو پاکستان کے اندر آگ لگانے اور فساد فی الارض برپا کرنے کا زریعہ خیال کرکے قلم اٹھائے ہوئے ہیں

ویسے مجھے روزنامہ امت کے اداراتی صفحے کے انچارج اور خود چیف ایڈیٹر پر حیرت ہے کہ انہوں نے ایک ایسے کالم کو شایع ہونے دیا جس میں اس ملک کی ایک بڑی مذھبی کمیونٹی کو پاکستان کا وفادار بتلانے کی بجائے ایک پڑوسی ملک(ایران ) کا وفادار کہا گیا-اور اس پوری شیعہ برادری پر یہ الزام بغیر کسی ثبوت کے لگادیا گیا کہ وہ پڑوسی ملک کے مفادات کے لئے کام کررہی ہے-اس کالم میں سیف اللہ خالد نے پاکستان کے پولیس افسران اور خفیہ ایجنسی کے اہلکاروں کے بارے میں عام آدمی کو گمراہ کرنے کی کوشش کی جیسے کہ وہ مولانا شمس معاویہ کو یہ بتاتے رہے ہوں کہ ان کی جان کو خطرہ پڑوسی ملک سے ہے اور وہ ملک پاکستان میں شیعہ کمیونٹی کے اندر سے مولانا شمس معاویہ کے لیے کرائے کے قاتل تلاش کرہا ہے جو اسے مل گئے اور یوں مولانا قتل ہوگئے-بھئی! یہ سیف اللہ خالد اخبار میں کالم نویسی کیوں کررہا ہے اس کو اینٹی ٹیررسٹ فورس کا تفتیشیشی محکمہ کیوں نہیں دیا جاتا جو کراچی بیٹھ کر لاہور میں ہونے والی قتل کی ایک واردات میں ایک پڑوسی ملک کا کردار بھی دیکھ لیتا ہے اور اس پڑوسی ملک کے اشاروں پر ناچنے والوں کو بھی بہچان لیتا ہے-سیف اللہ خالد تو جاسوسی ناولوں کے فرضی کردار شرلاک ہومز سے بھی کئی ہاتھ آگے نکلا-ابن صفی کی جاسوسی کہانیوں کا ھیرو علی عمران اس کے آگے کیا ہوگا؟

سیف اللہ خالد میں زرا بھی شرم اور پاکستان کی عوام سے تھوڑی سی بھی ہمدردی ہوتی تو وہ کبھی ایک ایسے تکفیری دھشت گرد دیوبندی ٹولے کو مظلوم بناکر نہ دکھاتا جس نے اس ملک میں اپنی سازشوں اور تخریب کاریوں سے دیوبندی اور شیعہ مکاتب ہائے فکر کے درمیان بہت زیادہ فاصلے پیدا کرڈالے ہیں اور بلکہ اس گروہ کے اعتدال پسندوں کو دیوار سے لگا دآلا ہے-اس گروہ نے پورے پاکستان کی مذھبی ہم آہنگی کو تباہ و برباد کردیا اور پاکستان کے معصوم شہریوں کے خون سے اپنے ہاتھ رنگنے سے بھی گریز نہ کیا-

سیف اللہ خالد میں اگر صحافتی دیانت داری کا مادہ ہوتا تو وہ اپنے پڑھنے والوں کو یہ ضرور بتاتا کہ جامعہ اشرافیہ سے سند فراغت پانے والا ایک ایسا مذھبی سکالر جس نے تخصص فی الحدیث کررکھا ہو اور وہ جامعہ اشرافیہ کے ان استادوں سے پڑھا ہو جو نمونہ اعتدال تھے کیسے تکفیری خارجی فکر کا اسیر ہوا؟کیسے اس نے درس نظامی میں پڑھی کتب دینیہ میں امن آشتی کے دروس کو نظر انداز کیا؟مجھے مولانا شمس معاویہ کے تکفیری دیوبندی دھشت گرد تنظیم سے تعلق پر سیف اللہ خالد کی چشم پوشی پر حیرانگی نہیں ہے لیکن کاش وہ یہ بتاتے کہ اہل سنت بریلوی مسلک کے علماء لاہور میں حضرت داتا گنج بخش کے مزار پر حملے کا ماسٹر مائنڈ اسی مولوی شمس معاویہ کو قرار دیتے ہیں-ان کے خیال میں ڈاکٹر سرفراز نعیمی کی شہادت میں اور لاہور ہائیکورٹ کے وکیل ذاکر رضوی ایڈوکیٹ اور کنگ ایڈورڈ کے ڈاکٹر اور ان کے کم سن بیٹے کی ہلاکت میں بھی شمس معاویہ کا کردار دیکھتے ہیں-یہ باتیں مولوی شمس معاویہ کے بارے میں بہت مشہور تھیں اور مولوی صاحب نے کبھی بھی جامعہ اشرافیہ سے تخصص فی الحدیث کرنے سے حاصل ہونے والے علم کو خیر خواہی اور نصحیت آموزی میں استعمال میں لانے کی بجائے بین المسالک ہم آہنگی کو ختم کرنے میں استعمال کیا اور عوام کو فرقہ وارانہ تنگ نظری کا شکار کرنے میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھی-اگر مولوی شمس معاویہ اپنے اساتذہ میں سے استادالعلماء شیخ الحدیث عبید اللہ انور کی صلح جوئی اور رواداری سے کوئی سبق سیکھ لیتے تو وہ اس راستے پر نہ چلتے جس پر سوائے اندھیرے کے اور کچھ نہیں تھا-

سیف اللہ خالد نے اس کالم میں شیعہ کے خلاف سادہ لوح دیوبندی نوجوانوں کو اکسانے کی بہت کوشش کی ہے-انہوں نے اہل سنت سواد اعظم کی گنتی دیوبندی تکفیری دھشت گردوں کے کھاتے میں ڈال کر ان کی مظلومیت کی جعلی اور جھوٹی داستان سنانے کی کوشش کی-سیف اللہ خالد اقلیت کے اکثریت پر قبضے کا ماتم کرتے رہے مگر یہ اقلیتی ٹولہ شیعہ نہیں ہے بلکہ تکفیری دیوبندی دھشت گرد ہے اور پڑوسی ملک کی بجائے اس ٹولے کو جہاں سے مدد ملتی ہے اس کا تذکرہ بھی کرنے سے وہ گبھرا گئے-سیف اللہ خالد سعودیہ عرب کی مداخلت اور وہاں سے آنے والی تکفیری آئیڈیالوجی کا تذکرہ بھی بھول گئے- وزیرستان کے کیمپوں سے آنے والے بمباروں کا تذکرہ کرنا بھی ان کو بھول گیا –سیف کا مقصد کالم میں آگ بھجانا نہیں بلکہ اس کو بھڑکانا لگتا ہے-وہ پہلے کالم نگار اور امت پہلا قومی اخبار ہے جس کے ادارتی صفحے پر فرقہ وارانہ آگ لگانے کی کوشش دھڑلے سے کی گئی ہے-

حیرت اس بات پر بھی ہے کہ کراچی میں کسی نے ان توھین آمیز جملوں کے ساتھ شایع ہونے والے کالم پر کوئی نوٹس نہ لیا-یہ اخبار اے پی این ایس اور سی پی این آئی کا رکن بھی ہے-ان دونوں اداروں اور پاکستان پریس کونسل کو اس کالم میں استعمال گئی اشتعال انگیز زبان پر نوٹس دینا چاہئيے –

سیف اللہ خالد نے اپنے اس کالم کے اندر اہل سنت والجماعت /سپاہ صحابہ پاکستان کی شیعہ کے خلاف نفرت انگیز اور تشدد و قتل پر اکسانے والی مہم کا جواز پیش کرنے کے لیے ناموس اصحاب رسول کے بارے میں ایک خوف پیدا کرنے کی کوشش اسی طرح سے  کی ہے جس طرح سے آج تکفیری ،خارجی دیوبندی دھشت گرد ٹولہ کررہا ہے حالانکہ جس پڑوسی ملک کے بارے میں ان کا قلم آک اگل رہا ہے اس کے سب سے طاقتور روحانی اور سیاسی پیشوا آیت اللہ علی خامنہ ای نے ایک فتوی جاری کیا ہے جس میں اصحاب رسول ،امہات المومنین کے بارے میں سب و شتم کرنے اور تبراء کرنے کو حرام قرار دیا ہے اور پاکستان میں بھی ملی یک جہتی کونسل کے پلیٹ فارم پر اہل تشیع کی نمائندہ جماعتوں نے اصحاب رسول کی توھین کرنے کو حرام قرار دیتے ہوئے ایسے شرپسندوں سے اظہار لاتعلقی اختیار کرنے کا اعلان کیا تھا-لیکن کتنے افسوس کی بات ہے آج تک دیوبندی تکفیریوں کے ہاں امام حسین اور ان کے ساتھیوں کی شہادت اور قیام کے بارے میں توھین آمیز کلام کا سلسلہ جاری ہے اور یزید کی مدح سرائی کی جارہی ہے-مشاجرات اصحاب رسول کا قصّہ اگر بازاروں اور چوراہوں پر کوئی لیکر آیا ہے تو وہ سپاہ یزید کے جلسے اور جلوسوں میں شروع ہوا-شیعہ کی عاشورہ کی مجالس اور جلوسوں کو بدنام کرنے کے لیے کہا جارہا ہے کہ ان میں تبرا ہوتا ہے-جبکہ ان مجالس میں اگر تبرہ ہوتا ہے اور برائت کا آظہار ہوتا ہے تو وہ یزید اور اس کے ساتھیوں سے ہوتا ہے اور اس کے فسق و فجور اور کفر کے بارے میں کسے شک ہوسکتا ہے اور اس کے لعنتی ہونے میں کس مومن اور کس مسلم کو اعتراض ہوسکتا ہے؟سیف اللہ خالد اگر تم اور تمہارے ممدوح عاشق اہل بیت اطہار ہوتے اور حقیقی محب اصحاب رسول ہوتے تو تم ان کی مدح سرائی نہ کرتے جو یزید کو ھیرو اور امام حسین کو باغی بنانے پر تلے بیٹھے ہیں جو عاشورہ کے دنوں میں شادیاں رچاتے ہیں اور یہاں تک کے شام غریباں کو شب زفاف مناتے ہیں-اور فضائل اہل بیت اطہار پر جن کے دل تنگ ہوتے ہیں تو ان کے خلاف تمہارا قلم سیف کیوں نہیں بنتا اور کیوں تمہارے لفظوں کا قہر ان پر نہیں ٹوٹتا جو اولیاء اللہ کے مزارات کو تباہ کرتے ہیں جو ہسپتالوں پر بم مارتے ہیں اور تم ان مدرسوں کے بارے میں لب کیوں سی لیتے ہو جن سے چلنے والا دھشت گرد عبداللہ شاہ غازی کے مزار پر پھٹ جاتا ہے اور بھکر سے تکفیری دھشت گرد ایک تکفیری دیوبندی مدرسے سے چل کر اہل سنت سواد اعظم کے عظیم عاشق رسول ڈاکٹر سرفراز نعیمی کی جان لیتا ہے اور ایک دھشت گرد جو تمہارے ممدوح کی منصوبہ بندی سے جاکر حضرت داتا گنج بخش کے مزار پرانوار پر جاکر پھٹ جاتا ہے-پیر سمیع اللہ کو مثلہ کرکے درخت سے اس لیے لٹکا دیا جاتا ہے کہ وہ یارسول اللہ قرۃ عینی (یارسول اللہ آپ میری آنکھوں کی ٹھنڈک ہو) سیف اللہ کہلانے والے خارجی تم کیا جانو عشق و مستی کیا ہوتی ہے ؟تم کیا جانو عشق رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم و اہل بیت اطہار کیا ہے ؟ تمہیں تو عقیدتوں اور آداب کے سارے قرینے شرک لگتے ہیں اور بدعت کا بخار تم کو چڑھنے لگتا ہے-اہل سنت کے نام سے تم اب زیادہ دیر لوگوں کو دھوکہ نہیں دے سکو گے-ناموس اصحاب رسول اور عترت رسول کے مقام کو کوئی خطرہ اگر ہے تو وہ سپاہ یزید سے ہے جو حرمت و ناموس رسول کی حفاظت کرنے والے عاشقوں کو بدعتی اور مشرک کہہ کر مارنے پر لگی ہوئی ہے

About the author

Aamir Hussaini

22 Comments

Click here to post a comment
  • aray ghusa choren g . . .

    aap bs ” Ashab e Rasool ” ki aik list apni site pr publish kren, dekhen sb fitna fasad khatm ho jaye ga . . .

    us list main ap ki nazr main jo jo Ashab e Rasool hain un k naam likh dijiye , is trah tada bhi wazeh ho jaye gi or pta bhi chal jaye ga k ap jo Ashab e Rasool ka lafz likh rahe is se murad kon se Ashab e Rasool hain . . .

    • Saif ullah Khalid showed he is a biased writer, I don’t know why he is crying When Shams is killed due to their internal differences over funding and area allocation by their own run away group of Malik Ishaq, and the same killed under their won Govt when their own Law Minister and many more minister is in power. If he is killed by his own faction under his Govt then why to blame others. Other aspect is The Article is full of biasedness as this writer attacked National Institutions many times and defended the CI A in his article. So it clearly shows from where the funds came and where it is used.

      • Aby O Ahud k bhagorron ki nasal, tu Umar Mavia tu kafar tera baaap kaaafir teriii maaa ki kokh se janam leny wala ha saanp kafar tera Haq Nawaz Jhangvi Bharwa kafar, Azam TYariq Mardood Kafar, Zia ur Rehman Gashti ka bachha kafar, Shams Mavia Bharrwa kafar, Saif Ullah Lnatullah Bhnchod kafar, Orangzeb Farrooqi Marddood kafar uska khandan kafar, Ludhianvi Bhnchod kafar uski maa kutia kafar

    • iss lehaz se to Abu Jahel, Abul Lahab aur Abdulah Bin Ubai (decared munafiq) bhi sahabi ho gaey. aap ki tojeeh ne bhi sabit kr dia k aap abu jahel hi ki nasal se hain.
      Al lanatullah e ala qomazzaimeen and qazibeen.

      • pehla tu apna khair mana kaapir pir mujko kuch kena. tu to naam say he kapir maloom hota ha.aur ye mera nai sabak mein liki ha baat ka jisna bi dekha woh sahaba r.a ha

      • Aby O sabaq k rattu totay, tjhy aqal chalni ma mili thi to apni amma se shikayat kar. Abdullah bin Ubai ka nam Quran ma aya wo muslman hua tha phir munafiq hogya wo b teri nazar ma sahabi, Abusafyn jo muslman nhi hua tha surrender hua thaa wo b tera baap sahabi hogia

  • Shamas Was A takfiri Deobandi who was killed by another takfiri group of Malik ishaq deobandi..This guy Saif ur rehman is a takfiri too..its good that he exposed himself ..Ummat news should be ashamed of while naming itself ummat and crying for those who are inciting hatred and rift between the ummat..Lanat ullah e ala qoum e zalimeen

    • you are absoultely right. these takfirees are killing muslims (shia sunni both) in the name of their deobandi islam. they are against darood and salam on our Nabi pak SAWW while Aah himslf says in Quran ” Bismillah H N R….inalah malaikatuho yusalona alan Nabi ya ayuhallazeena amano sallu alaihe wasallamo tasleema”
      meanig “ay iman walo Allah aur us ke farishte Hazoor SAWW pe salam bhete hain ay iman walo tum bhi un pe salam bhejo” Hazoor pe agar darood na bhejo to namaz nahin hoti magr ye deobandi kaisay namaz parrhta hai, Allah hi behtar janey. ye islam ke bhais mein munafiqeen ka toula hai, Allah inhin gharat hre. amin s amin

      • namaaz ma kisi ka kayaal karna sa namaaz batal ha chahay koi nabi s.a.w ho ya rasool. tum ko kya pata shariyat ka bara ma.

      • Namaz may jab kalma shahdat parhain to kia tum Rasool SAW ki jagha Sahaba ki gawahi daitay ho…Quran Siraf Rasool aur Ahle bait ki mohabat ka hukam daita hay….Yay Munafiq to har Sahabi ko ghair zaroori toor par barha daitay hain. Sahaba saray Achay ho hi nahi saktay kion kay saray achay hotay to Sura Munafiqoon kin par aie thi..Kia Quran ka inkar karoo gay

      • surah munafpiq kapir ka liye aya ta sahaba r.a ka liye nai. tu sunni ho nai sakta jo sahba r.a ka munkar ha. aur akhri baat tumko kisna kaha ka yeh sahaba r.a ha aur yeh nai yeh baat nabi jaanta ha tum ka us waqt ti nabi ka dor mein?

      • Nabi ne to apni zindagi ma hi kehdia tha k “Fatima mery jigar ka tukra h jisne isko taklef di usne mj taklef di” to Umer & Mavia ki mix olad sun k m Nabi Pak (PBUH) ki zahiri wafat k bd tmhry papa ne Bibi Fatima ka ghar jalaya, Hazrat Ali r Imam Hasan ko shaheed kia tmhry mavia ne bad ma usnk janazy pa teer barsaye tmhry pyary mavia ne r Imam Husain ko shaheed kia tmhry mavia k bety yazeed ne

  • اچھا تجزیہ تھا
    لیکن ہمارے تمام ادارے انکے سامنے بے بس ہیں دیوبندی مساجد سے قبضہ کرنے سے شروع ہوئی تھی اب وہ کرکٹ ، اقتضاد فوج ۔۔۔ سب پر قابض ہوچکی ہے
    اب ایسا خاردار درخت بن چکا ہے جسے بہت مشکل سے کاٹا جا سکے گا

    لیکن ابھی تک اس کے کاٹنے کا سوچا بھی نہیں جا رہا ہے لگتا ہے دھشتگردی کم از کم 50 سالوں تک اسی طریقہ سے جاری رہے گی

  • Umer mawiya tikson is right there were munafeqeen who have seen holly prophet, so sahaba is who, who had seen hazrat mohammed (saw), and stays momin till his death, other wise how about Abu bakar who fought against some people who had seen Hz Mohammed (SAW) and killed by his hands. So this criteria and check every person of that age and then decide who is sahabi.

  • These takfiiris are created by ISI and Pak Army during the time of Zia Ul Haque. Since then their policies have not changed. I think Mullah Muavia was a terrorist who was killed by his own friends. Since, now he has gone to join his other friends in the Jahannam, we should be thinking of Data Darbar’s safety. Because, Takfiris ASW, SSP and N-League must be planning something to take people’s attention away from their failed government.

  • Readers please don’t be discourage with Saif-Ullah Khalid’s column. He has exposed himself by writing his column. But there are plenty more who are on these Takifir’s payroll. Please carefully watch Kashif Abbasi on ARY and few others.

  • آپ لوگ اس کی تحریری شکایت اے پی ان ایس کو بھجیں