Featured Original Articles Urdu Articles

طالبان نے ایکسپریس اور جیو ٹیلی ویژن پر حملے کی ذمہ داری قبول کر لی، مزید حملوں کی دھمکیاں

express

نیوز رپورٹ : کالعدم دہشت گرد تنظیم تحریک طالبان پاکستان نے عمر میڈیا کے ذریعے ایک بیان جاری کیا ہے جس کے مطابق کراچی میں ایکسپریس نیوز کے دفتر پر حملے کی ذمہ داری قبول کی گئی ہے۔ طالبان، جو سپاہ صحابہ کی طرح مسلک دیوبند کے تکفیری گروہ سے تعلق رکھتے ہیں، نے پاکستانی میڈیا خاص طور پر ایکسپریس اخبار اور نیوز چینل پر شدید تنقید کرتے ہوۓ کہا کہ

میڈیا فرعون کے جادوگروں کی طرح شیعہ، سنی بریلوی،عیسائی، قادیانیوں کی زبان بن کر مجاہدینِ اسلام اور دیوبندی علما کو بدنام کرنے کی ابلیسی مہم ترک کردے

طالبان نے اپنے بیان میں دھمکی دی کہ ہم ہر مسلمان کو اللہ سے ڈراتے ہیں کہ ایسے میڈیا ادارے کی ملازمت چھوڑ دیں جو اسلام اور مجاہدین کیخلاف میڈیا وار لڑنے میں دن رات مصروف ہیں

ای میل کے ذریعے کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے نشر واشاعت کے ادارے ’عمر‘ کی جانب سے جاری ایک تفصیلی بیان میں تنظیم کا کہنا تھا کہ دو دسمبر کی رات ایکسپریس نیوز کے دفتر اور اس سے قبل جیو نیوز پر دستی بموں سے حملے کیے گئے۔

تحریک کا کہنا تھا کہ اگر صحافی اس سے باز نہ آئے تو آنے والے دن ان کے لیے ہولناک ہوں گے۔
یہ پہلی مرتبہ نہیں کہ پاکستانی طالبان نے صحافیوں پر حملے کی ذمہ داری قبول کی ہو۔ گذشتہ سال جون میں کراچی ہی میں ایک نجی ٹی وی چینل آج نیوز کے دفتر پر مسلح حملے کی ذمہ داری تحریک طالبان نے قبول کی تھی- ماضی میں اس طرح کے حملوں پر پاکستانی اور بین الاقوامی صحافتی تنظیمیں تشویش کا اظہار کر چکی ہیں- بدقسمتی سے میڈیا کے اندر بیٹھی ہوئی کچھ کالی بھیڑیں جن کا دیوبندی اور سلفی وہابی مسلک کے انتہا پسندوں سے تعلق ہے طالبان اور سپاہ صحابہ کی طرفدار ہیں جیسا کہ حامد میر، سلیم صافی، اوریا مقبول جان، انصار عباسی وغیرہ

طالبان کی جانب سے کہا گیا ہے کہ میڈیاان کے خلاف بے بنیاد باتیں پیش کرتا ہے اور امریکی پیسوں پر ان کا ترجمان بنا ہے۔ طالبان کی جانب سے یہ بھی دھمکی دی گئی ہے کہ ان کی حالیہ کارروائی تنبیہی کارروائیوں کا حصہ ہے جس کا سلسلہ جاری رہے گا۔ دھمکی دی گئی کہ اگر میڈیا نے اپنی روش نہ بدلی تو آنے والے دن ان کے کے لیے ہولناک ہوں گے۔ واضح رہے کہ طالبان کی جانب سے میڈیا کو پہلے بھی دھمکیاں دی جاتی رہی ہیں۔ اور چند ہفتے قبل بھی عمر میڈیا کی جانب سے پاکستانی اخبارات اور ٹیلی ویژن چینلز کو دھمکی دی گئی تھی – یاد رہے کہ وزیرستان اور قبائلی علاقہ جات میں تکفیری دیوبندی گروہ طالبان کے نام سے کام کرتا ہے لیکن کراچی، لاہور، کوئٹہ، پشاور اور دیگر علاقوں میں یہی گروہ سپاہ صحابہ (نام نہاد اہلسنت والجماعت) کے نام سے سنی بریلوی، شیعہ، احمدی، مسیحی اور فوج کے جوانوں کو اپنے ظلم کا نشانہ بناتا ہے

tt

http://peshawarnews.com.pk/taliban-threats-to-media-peshawar-news

http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2013/12/131205_taliban_claim_tv_attack_responsibility_zz.shtml

About the author

SK

2 Comments

Click here to post a comment
  • ایکسپریس نیوز کے دفتر پر فائرنگ، دو زخمی
    آخری وقت اشاعت: جمعـء 16 اگست 2013 ,‭ 14:17 GMT 19:17 PST

    فائرنگ کے واقعے میں ایک خاتون ورکر اور گارڈ زخمی ہوئے۔
    فائرنگ کے واقعے میں ایک خاتون ورکر اور گارڈ زخمی ہوئے۔ (تصویر: بشکریہ ایکسپریس نیوز)
    کراچی میں نجی اخبار اور ٹی وی چینل ایکسپریس نیوز کے دفتر پر نامعلوم مسلح افراد کی جانب سے فائرنگ کے نتیجے میں ایک خاتون ورکر اور گارڈ زخمی ہوگئے۔
    ایکسپریس نیوز کے مطابق کراچی میں ادارے کے دفتر پر دو موٹر سائیکلوں پر سوار 4 نامعلوم مسلح افراد کی جانب سے اندھا دھند فائرنگ کی گئی جس کے نتیجے میں خاتون ورکر اور گارڈ میر علی زخمی ہوگئے۔ زخمیوں کو قریبی ہسپتال منتقل کردیا گیا جبکہ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ نامعلوم افراد کی جانب سے 20 سے 25 فائر کیے گئے اور فائرنگ کے بعد چاروں افراد بلوچ کالونی کی جانب فرار ہوگئے۔

    http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2013/08/130816_express_news_attack_aw.shtml

    ایکسپریس نیوز کے دفتر پر حملے کے خلاف مظاہرے

    http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2013/12/131203_protests_journalists_erxpress_news_sa.shtml

  • Taliban Shura decides to target media outlets, journalists

    Shahidullah’s statement

    Mushtaq Yusufzai
    Wednesday, December 04, 2013
    From Print Edition

    914 134 503 1

    PESHAWAR: The shura or council of the Pakistani Taliban, headed by Maulana Fazlullah, on Tuesday unanimously decided to target the journalists and media organisations which carried, what they termed “fabricated” statement of their spokesman Shahidullah Shahid regarding Indian cricketer Sachin Tendulkar and Pakistani cricket team captain Misbahul Haq.

    It was the second shura meeting of the Taliban in which they developed consensus about showing reaction to recent statement of Shahidullah Shahid in the media.In an earlier shura meeting held on last Friday, the militant leadership could not make a unanimous decision about targeting the media people, though most of the shura members have condemned media attitude towards them.

    “In Tuesday’s meeting, we decided to target only journalists and media organisations which twisted recent statement of Shahidullah Shahid and tried to tarnish Taliban’s image nationally and internationally. The task has been given to a select group of people within the Taliban to collect information about the journalists and media organisations who fabricated statement of the spokesman,” said a senior Taliban leader and member of the shura.

    Pleading anonymity, he said the journalists by ‘allegedly’ running, what they called ‘untrue’ statement of the spokesman had hurt and enraged the entire Taliban leadership and invited their wrath.

    He said the previous shura meeting was convened in emergency to seek its permission for announcing a war against media people.During the shura meeting, he said, it was realised that there were some independent, professional and responsible journalists in the country, therefore, he added, they decided that all the journalists should not be punished for the wrongdoing of other journalists.

    He said some people in the Tehrik-e-Taliban Pakistan (TTP) were already not happy with the journalists and their work, but the way the media treated Shahidullah’s statement regarding the two cricket players, it made most of the people upset.

    The Taliban did not mention names of the journalists and media organisations they decided to target for running what they called ‘untrue’ statement of the TTP spokesman. “Those who did this dirty job know themselves,” he said.

    He said the journalists who intentionally misquoted the Taliban spokesman about an issue he did not talk about would face the consequences.The TTP shura member said the shura was supposed to meet on Monday to make a strategy about the journalists but their meeting could not take place due to some reasons.

    He said the TTP spokesman Shahidullah Shahid had not issued any statement in particular with the two cricket players, which, he complained, the media highlighted in a way to presume that the Taliban spokesman threatened media not to praise Indian cricket player Tendulkar or that he preferred Pakistani player Misbahul Haq over him.

    He said the spokesman during an interview had discussed the two players in a different context but the journalists claimed that he threatened media people and stopped them from praising Tendulkar.

    Meanwhile, Taliban sources said that Maulana Fazlullah on Tuesday removed senior Taliban commander Asmatullah Shaheen Bhittani from the status of ameer of the TTP central shura.In his place, Maulana Fazlullah appointed Sheikh Khalid Haqqani as the new ameer of TTP central shura.

    Commander Asmatullah Shaheen Bhittani, who belongs to FR Jandola, the gateway of South Waziristan, was working as ameer of the TTP central shura when Hakimullah Mehsud was killed in a US drone attack in Miranshah in North Waziristan on November 1, 2013.

    The TTP shura later on November 7 appointed Maulana Fazlullah as central ameer of the Pakistani Taliban and Sheikh Khalid Haqqani as his deputy leader. Sheikh Khalid Haqqani is a cleric and belongs to Swabi district.

    http://www.thenews.com.pk/Todays-News-13-27060-Taliban-Shura-decides-to-target-media-outlets-journalists