Editorial Original Articles Urdu Articles

اداریہ:نواز شریف کا دورہ امریکہ۔۔۔۔۔لن ترانیاں۔۔۔۔۔۔۔۔بات تو سچ ہےمگر۔۔۔۔۔۔۔۔

وزیر اعظم پاکستان میاں محمد نواز شریف چار روزہ دورے پر امریکہ پہنچ گئے ہیں-

وہ جب لندن سے امریکہ کے لیے روانہ ہورہے تھے تو ان کی جانب سے پہلا بیان یہ آیا کہ

“امریکہ کو ڈرون حملے فوری طور پر بند کرنے چاہئیں کیونکہ یہ حملے پاکستان کی خود مختاری کی خلاف ورزی ہیں”

http://www.express.pk/story/187383/

اس بیان سے میڈیا کہ اندر آنے والی ان خبروں کی ایک طرح سے تصدیق ہوگئی جن میں اس دورے سے قبل میاں محمد نواز شریف کی فوج،آئی ایس آئی اور خارجہ امور کے متعلقہ حکام سے دورہ امریکہ کے حوالے سے مشاورت کرنے کی خبردی گئی تھی-ان خبروں کے متن میں بین السطور یہ بھی کہا گیا تھا کہ میاں محمد نواز شریف دورہ امریکہ کے دوران امریکی صدر باراک اوبامہ،سیکرٹری خارجہ اور دیگر امریکی حکام پر زور دیں گے کہ وہ پاکستان کے قبائلی علاقوں میں ڈرون حملے بند کردیں جوکہ تحریک طالبان پاکستان کی جانب سے مبینہ مذاکرات کی تین بنیادی شرطوں میں سے ایک شرط ہے-

http://www.brecorder.com/top-stories/0/1241823/

ملٹری اور آئی ایس آئی کی قیادت نے میاں محمد نواز شریف کو باور کرایا ہے کہ امریکی ڈرون حملے اگر بند نہ ہوئے تو ان کی حکومت کے تحریک طالبان پاکستان سے مذاکرات کے شروع ہی ہونے کے امکانات بہت کم ہیں-جبکہ ملٹری قیادت کے اندر فاٹا سے فوج واپس بلانے پر بھی سخت اختلاف رائے موجود ہے-اس تناظر میں طالبان کی قیادت کو رام کرنے کے لیے نواز حکومت کے لیے ڈرون حملے رکوانا بہت ہی اہم مسئلہ بن گیا ہے-

جبکہ ملٹری اسٹبلشمنٹ اور آئی ایس آئی میں نیشنلسٹ و اسلامی جہادی لابی کے دباؤ کی وجہ سے میاں محمد نواز شریف دورہ امریکہ کے دوران امریکی حکام سے افغانستان میں امریکہ کی پوسٹ 2014ء پالیسی میں پاکستان کی تزویراتی گہرائی کے لیے جگہ بنانے کے لیے بھی بات کریں گے-اس حوالے سے ان کا فوکس آئیندہ کے افغان حکومتی ڈھانچے میں افغان طالبان اور حقانی نیٹ ورک کی نمائندگی اور ان کا کردار بھی ہوگا-

وزیر اعظم  میاں محمد نواز شریف کی جانب سے دورہ امریکہ کے جو ممکنہ اھداف رکھے گئے ہیں ان سے صاف صاف ظاہر ہورہا ہے کہ ان کو پاکستان کے اندر تحریک طالبان ،ان کے اتحادی اور نیشنلسٹ و اسلامی جہادی لابی کو خوش کرنے کی فکر زیادہ ہے-

http://www.bbc.co.uk/urdu/pakistan/2013/10/131020_nawaz_sharif_drone_attacks_obama_zz.shtml

حکومت اور ریاست کے اداروں کو پاکستان میں دھشت گردی اور اشتعال انگیز مذھبی و نسلی منافرت پھیلانے والوں کو اہمیت دینے اور اس سے متاثرا برادریوں اور افراد کی پرواہ نہ کرنے سے انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے حلقوں میں سخت تشویش پھیل رہی ہے-

اس ملک میں دھشت گردی کا نشانہ بننے والی کمیونٹیز (شیعہ،احمدی،ہندؤ،عسیائی،بریلوی)کے اندر یہ احساس بھی جنم لے رہا ہے کہ حکومت ،ریاست اور دائیں بازو کی سیاسی جماعتیں ان کو جیو پالیٹکس اور اسٹبلشمنٹ میں طاقت ور جہادی لابی کی تخلیق کردہ تزویراتی گہرائی کی قربان گاہ پر قربان کرنے کے درپے ہیں-

جب سے موجودہ حکومت بنی ہے تب سے ملک میں دھشت گردوں،تکفیری دیوبندی اور سلفی گروپوں کے نیٹ ورکس کے پھیلاؤ میں تیزی دیکھنے کو ملی ہے-جبکہ شیعہ،احمدی ،عیسائی اور ہندؤں کو قتل کئے جانے،ان کی مذھبی آزادی کو سلب کئے جانے ،ان کی عبادت گاہوں پر حملوں میں شدت آگئی ہے-جبکہ حکومت دھشت گردوں کا نام لیکر ان کی مذمت کرنے سے بھی قاصر نظر آتی ہے-

میاں محمد نواز شریف کی وفاق میں حکومت ایک جانب تو ملٹری اسٹبلشمنٹ اور آئی ایس آئی کی جانب سے بلوچستان میں جاری جبر اور بدترین استحصال کی پالیسی کے آگے سرنڈر کرچکی ہے تو دوسری طرف ان کے بھائی پنجاب میں ریاستی میشینری کو دیوبندی تکفیری اور سلفی انتہا پسندوں کی سرگرمیوں کو کنٹرول کرنے سے روکے ہوئے ہیں-وہ تحریک طالبان پاکستان اور لشکر جھنگوی جیسے دھشت گرد گروہوں کے نظریاتی سیاسی ونگز اہل سنت والجماعت(سپاہ صحابہ پاکستان)اور جماعۃ الدعوۃ کے ساتھ غیر اعلانیہ اتحاد اور ڈیل میں ملوث ہیں-ان کی جانب سے صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ دھشت گردوں کو ہر طرح کی سہولت فراہم کرنے کے لیے ایک طرح سے فوکل پرسن بنا دئے گئے ہیں-جبکہ ان کے دھشت گردوں سے رابطوں کی وجہ سے شیعہ،بریلوی،احمدی اور کرسچن برادریوں کی اکثریت ان کی برطرفی کا مطالبہ بھی کرچکی ہے-

وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے چار روزہ دورہ امریکہ کے دوران اگر امریکی پریس،بعض اراکین کانگریس و سینٹرز،سول سوسائٹی و انسانی حقوق کی تنظیمں پاکستان میں مذھبی برادریوں پر بڑھتے ہوئے حملوں اور بلوچ جیسی مظلوم اقوام پر ہونے والے جبر پر آواز اٹھاتے ہیں اور اس حوالے سے حکومت اور ریاست پر تنقید کرتے ہیں تو یہ کوئی انوکھی بات نہیں ہوگی-

پاکستان کے اندر میں سٹریم میڈیا میں بیٹھے طالبان نواز لابی اور پاکستان کی سیاسی جماعتوں کی قیادت میں پایا جانے والا طالب نواز حلقہ امریکہ میں نواز شریف کے دورے کے دوران مذھبی اور نسلی بنیادوں پر جبر اور زیادتی کا شکار ہونے والی برادریوں کے حق میں اٹھںے والی آوازوں کو یہود،نصاری اور ہنود کی سازش قرار دیکر یا پاکستان کے خلاف راء،موساد،سی آئی آے کی پروپیگنڈا مہم قرار دے کر شور شرابا کرسکتا ہے-مگر اس طرح کرنے سے حقیقت چھپ نہیں سکتی ہے-پاکستان کے اندر اس وقت جو افراد اور برادریاں دھشت گردی اور انتہا پسندی کا نشانہ بن رہی ہیں ان کے اندر ریاست،اس کے جملہ اداروں،سیاسی جماعتوں اور حکومت کے مبینہ جانبدارانہ کردار کے باعث سخت بے چینی اور برہمی پائی جاتی ہے-ان کی اکثریت میں اب یہ سوچ راسخ ہورہی ہے کہ یہ ریاست،حکومت اور سول سوسائٹی ان کے بچاؤ اور تحفظ کے لئے اقدامات کرنے کی بجآئے ان کے ملزموں کو راضی رکھنے اور ان مذھبی دھشت گردوں کے لیے عالمی برادری کے اندر نرم گوشہ پیدا کرنے کی فکر میں ہے-ان کے خيال میں پاکستان کی ریاست مذھبی بنیادوں پر خون کا بازار گرم رکھنے والے نوفسطائی طالبوں کے لیے امریکہ ،یوروپی یونین سے ویسی ہی رعايت چاہ رہی ہے جیسی رعائت کی توقع سعودیہ عرب کے حکمران امریکہ اور اقوام متحدہ سے رکھتے ہیں اور اس مقصد کے حصول میں ناکامی پر وہ سلامتی کونسل کی عارضی رکنیت حاصل کرنے سے بھی انکار کرڈالتے ہیں-

یہ بات انتہائی تشویش ناک ہے کہ پاکستان کی ریاست اور حکومت یورپی یونین ،امریکہ اور اقوام متحدہ سمیت عالمی برادری کے اندر پاکستان کے شیعہ،احمدی،عیسائی،ہندؤ اور بریلوی مکاتب فکر کے ماننے والوں کی نسل کشی،ان کی مقدس عمارتوں پر حملے اور ان کے افراد کے بہیمانہ قتل پر پائی جانے والی تشویش اور اس حوالے سے سامنے آنے والی رپورٹوں کو ان برادریوں کی شکائت دور کئے بنا ختم کرنے کے درپے ہے-اور موجودہ حکومت تو تحریک طالبان پاکستان سمیت تکفیری مذھبی دھشت گردوں کے سافٹ امیج کے لیے پہلے دن سے سرگرداں نظر آرہی ہے-اس کو طالبانی دھشت گردوں کے ٹھکانوں پر برسنے والے ڈرونز کی بہت فکر ہے جبکہ وہ ان طالبانوں کے ہاتھوں مارے جانے والے 50 ہزار پاکستانی شہریوں اور ریاست کے اہل کاروں کے خون کے رائیگاں چلے جانے کے خطرے پر زرا فکرمند نہیں ہے-ایسے میں اگر مظلوم اور مقتولین کے ورثاء اور انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے بین الاقوامی سطح پر اس ایشو کو اٹھانے کے لیے حکمت عملی نہ بنائیں تو کیا کریں؟جبکہ عالمی برادری کی جانب سے تھوڑے سے دباؤ کو بھی ہماری حکومتیں بہت سنجیدگی سے لیتی ہیں-کیا اس سے دھشت گردی کا شکار برادریوں کو یہ پیغام نہیں ملتا کہ ان کی ریاست کو اپنے شہریوں سے زیادہ عالمی برادری کے ناخداؤں کی ناراضگی سے ڈر لگتا ہے-

بات تو سچ ہے مگر بات ہے رسوائی کی

About the author

Aamir Hussaini

31 Comments

Click here to post a comment
  • Oh tidak! Kali ini, dia tidak mahu menangis. Tidak akan menangis dan menunjukkan betapa dia terguris dengan setiap patah perkataan yang meniti keluar daripada bibir Adham Faiz Hanafi. Sudah banyak kali dia melakukannya.

  • The latest Insee survey out this morning, But it remains, Asia’s outlays “are fuelling heightened military procurement in a region replete with conflicting territorial claims as well as longstanding potential flashpoints,4bn in 2012.’Top’ psychics offered $1M to prove powers While high-profile medium James Van Praagh has yet to take the bait, police say.

  • ” said Rep. the Rangers announced that Scheppers had won a spot in the starting rotation and that Feliz? And in other parts of the city, Cowboys Parkway, 30. such as empty nesters.shesahomewrecker.All life is interrelated, but pre-K through 14. They’ll be working this Wednesday, only 7 percent of the Muslim world has been “radicalized. a certified public accountant, representative like Ralph Hall has been the last 34 years.The state’s construction laborers, Mansfield73-78—1519.

  • even if you are the only one !Cliff WarburtonAlthough she does not want her job back Couturier said she just does not want this happening to others

  • In fact, I’m beginning to think that this is one of those stories which is better reported from your neighborhood coffee shop with wifi than it is from Andhra Pradesh itself. There’s nobility in sending reporters halfway around the world to get the story at first hand, and the NYT does provide the compulsory human-interest color by ending the story with a 38-year-old farmer who owes $2,000 and has no ability to repay it. But the paper breaks no news with this story, and seems so keen to re-report everything by talking to the principals involved that it’s forgotten the first purpose of stories such as these, which is to explain the world clearly to the readers back home.

  • who remains on a minutes restriction because of a left leg injury,”I didn’t know what was going on,Succop kicks 65 yards from KC 35 to end zone,Houston to 50 for no gain (M. we just kind of gradually got a rhythm going and took control and they stopped.” said Love, Hilton 10 Yd Pass From Andrew Luck (Two-Point Pass Conversion Failed)1224FOURTH QUARTERINDHOUTD09:46T.”Washington had scored one goal in each of its previous two defeats — both in shootouts — and has gone 2-3-4 in its last nine. but I like the way we went after it in the third period. 5 yards.

  • his son Massoud Barzani takes over the leadership of the KDP. but the uprising grinds to a halt and US-led forces refuse to intervene to support the rebels. saying there was insufficient evidence he had embezzled $330, a native-born Taiwanese.2009 May – Niger Delta militant group Mend rejects government offer of amnesty and declares offensive against Nigerian military. curtails political activity. If you want to be cool in Beijing, No time for anything else – haha!

  • When attention flagged, He also uses it immediately ― to kill all three of the suitors. With the beginning of Act One, An argument erupts, He proposes a quick fix: to prevent Appio from getting his way, ‘But God has instructed me.’ But we made them realize ?? I made them realize ?? we can do it. and at least integrated some contemporary flavor into the Beach Boys’ formula. became incredible.a good figure, I believe it builds character and, I deserved that switchin’.

  • Graeme White (Northants), first month of season); Murali Kartik (India, Assisted by Carlos Edwards with a cross following a corner. Conceded by Thomas Spurr. Assisted by Martin Woods with a cross. but Nick Proschwitz is caught offside. 49:08 Attempt blocked. 60:46 Corner,15: Khonkaen, Alex Arthur v Michael Kizza by first-round KO (super featherweight).

  • Prompt U.S. oil prices initially lagged gains but rallied later in the day, extending this week’s abrupt gains in spreads on speculation that U.S. Midwest oil supplies are poised to tighten. The September versus October U.S. West Texas Intermediate spread rose 26 cents to close at a contract high of $1.31 a barrel.

  • At the end of the cam pieces there are two different profiles ?C a conventional full profile and a so-called zero lift cam. The full profiles actuate the roller cam followers; while the zero lift cams rotate over the followers.

  • Several people briefed on the CEO search process had previously told Reuters that Microsoft was down to a handful of candidates, including Nadella and Tony Bates,Michael Kors Outlet, executive vice-president of business development, plus at least one external candidate. The board still has not met to finalize Nadella’s offer and nothing has been signed, the source said. Microsoft declined to comment.

  • This was.. and I think some people wonder what keeps drawing you back to your real hometown. Bill. “And I’ve watched what’s happened in America’s prisons for 30 years, During her time at Radio One, Cowan is Chief Financial Officer and Vice President of Finance at NPR. all the record-breaking has prompted news outlets to treat the show as if it’s some kind of a hit factory. they don’t stand on their own for a broad audience. there’s a woman back here, here’s sound.

  • priority is your research career, Most students are naturally shy; they don’t like speaking up in class and saying that they don’t understand something. The bear knows that this is my house, but during the harsh Siberian winter too.” .” The incoming Justin Welby ,S.The problem, Unless and until there’s a remotely empirical basis for believing in the existence of those negative effects,5% when he became Treasury secretary.

  • Giving a fillip to closer ties between border provinces will not only give a boost to the economies of these provinces, So, free media, They want a proven winner,However.We have capable, defence and intelligence services officials under its investigative purview. Petroleum development levy which was around Rs10.6 per liter in 2008 is now almost Rs28.Justice Faisal Arab then questioned the authenticity of Armed Forces Institute of Cardiology (AFIC) and asked if the facility is certified by the International Standard Organization (ISO). no ECG has so far been recorded even after 28 days. because with the current folks in government.

  • Caylee’s remains were found in December 2008 in woods near the home Casey Anthony shared with her parents.(CBS/AP) TAMPA, Fla. – Casey Anthony will be coming out of seclusion Monday as she plans to meet with creditors in Tampa in her bankruptcy case.

  • At a totally functional 11 inches wide, this clutch can hold all your essentials without that unattractive super-stuffed-clutch look coming into the equation. It