Featured Original Articles Urdu Articles

صحابہ عمار بن یاسر اور حجربن عدی کے مزارات کو تباہ کرنے کے بعد شام میں وہابی دہشت گردوں نے خالد بن ولید کی قبر کو تباہ کر دیا

kbw

 

شام میں شہر  حمص میں حضرت خالد بن ولید (رض)، کی مسجد اور مقبرے  پر تکفیری وہابی دیوبندی دہشت گردوں کی طرف سے حملے کے ایک تازہ ترین فوٹیج ہے. خالد بن ولید  نے فوجی خدمات سے ریٹائرمنٹ کے بعد سے جہاں ایمیسا  میں رہائش پذیر تھے  . ان کی قبر اب خالد بن ولید مسجد کے نام سے ایک مسجد کا حصہ ہے. خالد  نے زندگی میں بغیر شکست کے پچاس سے زائد جنگوں میں فاتح اپنے نام کی  جن میں چھوٹی بڑی جنگیں شامل ہیں

picture

ال نصرہ فرنٹ (القاعدہ) کے وہابی دیوبندی دہشت گردوں نے سنی صوفی ٹرسٹی اور خالد بن ولید کی مسجد اور درگاہ کے منتظم کو ہلاک کر دیا اور مسجد اور مزار کو ہتھیار ڈپو کے طور پر استعمال کیا جاتارہا اور اس کے بعد مزار کے اندر بم لگا کر خالد بن ولید کی قبر پر مشتمل مزار کا حصہ اڑا دیا . سلفی وہابی اور دیوبندی عقائد کے مطابق، مزارات یا بڑی قبروں کی تعمیر کی اسلام کے ان کے اپنے ورژن میں اجازت نہیں ہے.

شام کے شیعہ مسلمانوں اور صوفی سنی مسلمانوں نے سعودی وہابی سلفی اور پاکستانی دیوبندی دہشت گردوں کی  جانب سے حضرت خالد بن ولید کے مزار کی بے حرمتی پر گہرے دکھ اور غصے کا اظہار کیا ہے –

سعودی عرب کے  زیر اثر  وہابی میڈیا (العربیہ، الجزیرہ، اور فری سیرین آرمی  / ال نصرہ  / وہابی ذرائع) نے خالد بن ولید مسجد کے ایک حصے کو نقصان پہنچانے کا الزام شام کی سرکاری فوج پر لگایا ہے – غیر ملکی ایجنسیوں کے مطابق اس نقصان کی ذمہ دار بھی سعودی تکفیری وہابی دہشت گرد تھے جو مسجد اور مزار کو ایک مورچے کے طور پر استعمال کر رہے تھے – لیکن سعودی عرب کے زیر اثر میڈیا نے اس کا سارا الزام شامی فوج پر لگا دیا جیسے کہ یہ گمراہ کن رپورٹ ہے

http://tribune.com.pk/story/580314/army-shelling-destroys-historic-syrian-shrine-ngo/

اور شامی حکومت اور فوج کے خلاف  یہ پراپیگنڈہ بھی شام میں ایک سعودی وہابی حمایت یافتہ این جی او کے حوالے سے کیا جا رہا ہے

 

فوجی مقاصد کے لئے شام میں وہابی دہشت گردوں کے مساجد کے غلط استعمال کی یہ صورت  پاکستان کے دیوبندی دہشت گردوں  کے اسلام آباد کی لال مسجد کے غلط استعمال سے مختلف نہیں ہے. پاک فوج نے  اسلام آباد کی لال مسجد  جسے طالبان / سپاہ صحابہ چھپنے کے لئے استعمال کرتے تھے  دیوبندی دہشت گردوں کے خلاف 2007 میں بہادری سے  ایکشن لیا. گو کہ اس میں لال مسجد کو  جزوی طور پر نقصان پہنچا ہے  لیکن یہ پاکستانی فوج کی نیت نہیں تھی نہ ہی فوجی آپریشن اس مقصد سے کیا گیا تھا. اصل میں، اسلام آباد کی لال مسجد اور حمص  کی خالد بن ولید مسجد حقیقی نقصان ان  دہشت گردوں کے سر ہے جنہوں نے اپنی  دہشت گرد سرگرمیوں کے لئے  مسجد کا استعمال کر رہے تھے

red-mosque

دو ہزار نو میں غزہ میں حماس کی حکومت نے ایک مسجد میں چھپے کم از کم 21 چھپا سلفی وہابی دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کی. اگست 2009 میں حماس نے رفاہ میں سلفی وہابیوں کے ایک گروپ سے تعلق رکھنے وا لے دہشت گردوں کے خلاف کروائی کی جو وہاں جمع ہوئے تھے ، حماس نےایک مسجد پر چھاپہ مارا. گروپ کے رہنما عبد لطیف موسی، براہ راست حماس کی حکمرانی کو چیلنج کرنے کا مرتکب تھا اور اس نے غزہ میں ایک اسلامی امارات کا اعلان کیا تھا. حماس کی کاروائی کے نتیجہ میں موسی سلفی اور چھ عام شہریوں سمیت 21 دوسرے لوگ حملے میں ہلاک ہو گئے.

ا س سے پہلے اپریل 2013 ء میں، وہابی-سلفی دیوبندی دہشت گردوں نے شام کے علاقے رقعہ میں حضرت عمار بن یاسر رضی اللہ عنہ، جو کہ ابتدائی مسلمانوں میں سے ایک ہے اور حضرت محمد (ص) کے قریب ترین اصحاب میں سے ہے ان کی کی قبر اور مزار کو تباہ کر دیا تھا

http://www.presstv.com/detail/2013/03/12/293239/militants-destroy-muslim-shrine-in-syria/#sthash.P8CgGnm2.dpuf

ammar

ammar2

ammar3

مئی 2013 میں، شام میں وہابی دیوبندی تکفیری دہشت گردوں نے ایک عظیم صحابی حضرت حجر عدی (رض) کے مزار کو تباہ کر دیا ان کی قبر کھودی اور ان کےمقدس جسم کو نہ معلوم مقام پر منتقل کر دیا –

اس تصویر میں آپ ہجر ابن عدی کی قبر کو دیکھ سکتے ہیں جو وہابی تکفیریوں نے تباہ کر کھود ڈالی :

hujr-ibn

حال ہی میں  نصرہ  فرنٹ (القاعدہ) اور فری سیرین آرمی  کے تکفیری  دہشت گردوں نے  سیدہ زینب (ع) نواسی رسول (ص) کے مزار کو تباہ کرنے کے لئے حملہ کیا

zainab

وہابی دیوبندیوں کے مذہبی نظریات کے مطابق، یہ قبروں یا مزاروں پربڑے چبوترے  کی تعمیر  حرام ہے.  مکہ اور مدینہ پر قبضہ کے بعد، سعودی عرب کے وہابی سلفی حکمرانوں نے حضرت امام حسن، حضرت عثمان، حضرت امام جعفر صادق ‘ اہل بیت اور صحابہ کے دیگر معززہستیوں کے مقبروں اور قبور کو تباہ کر دیا تھا

 

baqi

 

pic1

 

b13

 

b23

دمشق میں حضرت محمد(ص)  کی نواسی  سیدہ زینب (ع)کے مزار  پر وہابی دیوبندی دہشت گردوں کے حملے سے دنیا کی توجہ موڑنے کے لئے  القاعدہ / طالبان  نے الاسد حکومت پر الزام لگانے کے لئے  حمص  میں خالد بن ولید کی مسجد اور قبر کو تباہ کر دیا .یہ کھیل  القاعدہ  نصرہ اور پاکستان سے جانے والے  طالبان وہابی دیوبندی دہشت گردوں  نے کھیلا ہے تا کے خالد بن ولید کی مسجد الاسد کی حکومت کی طرف سے تباہ کرنے کا  الزام لگایا جاتا سکے . جماعت اسلامی کے کارکن ابراہیم قاضی اور ٹی وی اینکر غریدہ فاروقی بھی اس اس کھیل میں  شامل ہیں  یہ افراد  کچھ مختلف الزامات  لگا رہے ہیں رہے ہیں، مثال کے طور پر، سیدہ  زینب کے مزار پر حملے خالد بن ولید کی مسجد پر حملے کا نتیجہ تھا، خالد مسجد اور سیدہ  زینب کے مزار پر حملہ   اسد فورسز  کی طرف سے کیا گیا  یہ طالبان، القاعدہ کی طرف سے مخصوص پروپیگنڈے  کا حربہ ہے. –

جماعت اسلامی پاکستان کے اس فیس بک پیج پر  شام میں سیدہ  زینب کی قبر پر ہونے والے حملے پر ایک بھی پوسٹ نہیں ہے

https://www.facebook.com/mybitforchange

ایکسپریس ٹریبیون کی خالد بن ولید مسجد پر حملہ کی رپورٹ اس این جی او کی رپورٹ کے مطابق ہے

https://lubpak.net/archives/276933  #sthash.rALkJf83.dpuf 

خالد بن ولید مسجد کو القاعدہ کے وہابی دہشت گردوں کے پروپیگنڈے کے بر عکس انہوں نے وہ خود کو تباہ کیا ہے . لکڑی کی چھت قبر دھماکہ، برقرار ہے. یہ اسد حکومت کی جانب سے فضائی بمباری سے تباہی کے بعد ممکن نہیں ہے. –

تکفیری  دہشت گردوں اور ان حمایتیوں  کو وضاحت کرنا چاہئے: دمشق میں معاویہ کی قبر کی حفاظت الاسد کی حکومت کے سوا کون کر رہا ہے؟ انہوں نے یہ بھی وضاحت بھی ضروری ہے: یہ زمین کی  سطح کے مزارات اور بڑے قبروں  کی تباہی وہابی عقیدے کا حصہ (عقیدہ) نہیں ہے؟کیا پاکستانی میں وہابی دیوبندی دہشت گردوں نے  اسلام آباد وغیرہ میں داتا دربار لاہور، عبداللہ شاہ غازی کراچی، خیبر پختونخواہ میں خوشحال  خٹک،بری  امام کے مزارات پر حملہ نہیں کیا تھا؟ شام میں وہابی دیوبندی دہشت گرد صحابہ  حضرت عمار بن یاسر، حضرت حجر  بن عدی وغیرہ وغیرہ کی قبروں اور مزاروں کو تباہ  نہیں کیا ؟ کیوں صحابی  حضرت عمار بن یاسر کی قبر میں سے ایک اپریل 2013 ء میں شام میں وہابی  دشت گردوں کی طرف کی طرف سے تباہ کیا گیا تھا جب چوپپا سپاہ صحاب ہدہشت گرد  اور حمایتی  تھے؟ کیوں ان صحابہ کے مزارات کو  دہشت گردوں  اور سعودی وہابی حکومت کی طرف سے تباہ کر دیا -یہ منافق صحابہ اور اہل بیت کی قبور کی سعودی حکمرانوں کے ہاتھوں منھدمی کے خلاف  اور قبروں کی تعمیر نو کے لئے پاکستان اور دیگر ممالک میں شیعہ اور سنی بریلوی سالانہ مظاہروں میں شرکت کیوں  نہیں کرتے؟ –

شام، سعودی عرب، پاکستان میں اولیا صحابہ کی قبروں، اہل بیت، کو جن ؛لوگوں نے تباہ کر دیا وہ لوگ جو دہشت گرد ہیں. اللہ ان پر لعنت فرمائے. ہم سب صحابہ (رض) اور اہل بیت (ع) کے مزاراتکا شام، سعودی عرب اور دیگر ممالک میں دوبارہ تعمیر کا مطالب کرتے ہیں

جماعت اسلامی پاکستان کے ابراہیم قاضی نے مسجد خالد بن ولید کی تباہی کا الزام شیعہ مسلمانوں پر لگایا گیا تھا اس پراپیگنڈے میں جس میں ال نصرہ فرنٹ (القاعدہ) اور فری سیرین آرمی طرف سے بنائی گئی ایک ویڈیو تقسیم. ویڈیو اور تبصرے حزب اللہ، ایران، بشر اسد اور عام طور پر شیعہ مسلمانوں کے خلاف غیر مہذب زبان استعمال کی گیی

 

qaziqazi 3

qazi 2

1

2

3

4

a1

a2

a3

a4

a5

a6

a7

a82 1

About the author

Shahram Ali

3 Comments

Click here to post a comment
  • My grave is safe and well protected by Assad regime. Thank you Baashar. I hereby allot Basshar 70,000 Acres in the Defence area of Jannat! 🙂

  • Allah-o-Akbar, Ya Aba abdillah AlHussein (AS)!
    May Allah give consciousness and strength to all faithfuls to defend holy relics of my Lord Muhammad (SAWAW), his Ah – lul- Bait Athar (PBUT) and his Ashab (RAAH). His enemies have descended to a very low level.

  • In today’s column in Jang (Friday), Dr. Amir Liquat Hussain, has confirmed that Takfiri-Nasibi-Munafiq Jihadis are solely responsible for destruction of Hazrat Khalid bin Walid (RA) shrine. exposed He has exposed Kharjiites. This confirms the information shared by this blog.