Newspaper Articles

Imran Khan calls on CJ Iftikhar Chaudhry to take suo moto action on Shia genocide

In this picture, Imran Khan (C) meets with Sheikh Muhammad Hassan Jaffery (L) in Skardu, the main city in northern region of Gilgit–Baltistan, Pakistan, on September 2, 2012. Imran Khan of PTI and Atlaf Hussain of MQM have taken a bold stance on Shia genocide. Ruling PPP led by President Asif Zaradri remains criminally silent.

Pakistani opposition politician Imran Khan has called on Supreme Court Chief Justice Iftikhar Mohammed Chaudhry to take suo motu notice of Shia killings in the country, Press TV reports.

Khan, who leads Pakistan Tehreek-e-Insaf (Movement for Justice or PTI), made the remarks on Sunday in a meeting with prominent Shia leader Sheikh Muhammad Hassan Jaffery in Skardu, the main city in northern region of Gilgit-Baltistan.

Khan asked why Justice Chaudhry has taken suo motu notices of relatively trivial matters but he does not take action against sectarian killings in the country.

He strongly condemned the recent killings of Shia Muslims in southwestern Balochistan province and in Gilgit-Baltistan.

On August 16, terrorists pulled 21 Shia Muslims from a bus and killed them at point blank range in the northwestern district of Mansehra in the hills of Babusar Top, about 160 kilometers north of the capital Islamabad. It was the third such incident in six months.

Khan said the government in Islamabad had completely failed in maintaining law and order in the country.

On Saturday, seven Shia Muslims were gunned down in Quetta, the capital of Balochistan province.

The Saturday attacks came hot on the heels of the killing of senior Shia judge, Zulfiqar Naqvi along with his driver and bodyguard in Quetta on Thursday.

A survey conducted by the Washington-based Pew Global Attitudes Project in June showed that former cricket star Khan is the most popular politician in the country. More than 70 percent of the people offer a favorable opinion of Khan.

According to an estimate 19,000 Shia Muslims have been killed in various areas of Pakistan at the hands of the Takfiri Deobandi-Wahhabi terrorists belonging to the Taliban and Lashkar-e-Jhangvi (aka Ahle Sunnat Wal Jamaat).

http://www.presstv.ir/detail/2012/09/02/259545/pakistani-politician-slams-shia-massacre/

http://tribune.com.pk/story/430252/cj-should-take-notice-of-shia-killings-imran-khan/

Twitter Monitor

Imran Khan ‏@ImranKhanPTI 2 Sep 2012
Had an intense mtg with leading Shia Aalim Sh Hassan Jafri of GB who has an 8000 Juma congregation. We held a jt press conference.At PC we declared it was job of govt 2 protect all its citizens but it had utterly failed 2 do so, leaving the Shia community terrorised. Sh Jafri & myself called on CJ of SC to take suo moto action on the targeted killings of Shias. I also had meetings with Ulema from Ahle Sunnat, Ahle Hadith & Noor Bakhshi of the Sufi Order which has tremendous following in GB. all the Ulema condemned the Shia killings & sought peace & harmony. They condemned the state & govt for failing to protect the ppl. Equally all agreed that it was govt’s job to ensure the safety and protection of all its people. Unfortunately the govt had failed to do so. All the Ulema agreed there was a deliberate effort 2 create Shia-Sunni conflict as part of a conspiracy against Islam.

Islam Times Report

اہل تشیع کی منظم منصوبہ بندی کے ذریعے نسل کشی کی جا رہی ہے، عمران خان

اسلام ٹائمز: پی ٹی آئی کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ فرقہ وارانہ دہشتگردی قوم کے وجود کے خلاف ایک خطرے کے طور پر ابھر کر سامنے آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوئی معمول کی بات نہیں کہ جسے نظر انداز کیا جا سکے، مگر حکومتی سطحوں پر ایسا ہی کیا جا رہا ہے۔

اسلام ٹائمز۔ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ کوئٹہ میں قتل عام جاری ہے اور ہزارہ کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے سات اہل تشیع افراد کو قتل کر دیا گیا لیکن نہ تو بلوچستان کی حکومت اور نہ ہی وفاقی حکومت کو ذرہ برابر بھی فرق پڑا ہے۔ انہوں نے ان ہلاکتوں کی شدید مذمت کی اور ان واقعات کو بلوچستان میں ہزارہ کمیونٹی اور اہل تشیع کی ایک منظم منصوبہ بندی کے ذریعے نسل کشی قرار دیا۔ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے کہا کہ دہشت گرد تنظیم لشکر جھنگوی نے ایک بار پھر ان واقعات کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہاں سوال یہ اٹھتا ہے کہ اب تک اس تنظیم کی قیادت اور اراکین کی نہ تو شناخت ہو سکی ہے اور نہ ہی انہیں گرفتار کیا گیا ہے, جس سے انٹیلی جنس کی ناکامی ظاہر ہوتی ہے اور اس معاملے پر بلوچستان حکومت کی بےبسی اور وفاقی حکومت کی بےحسی واضح طور پر عیاں ہے۔ عمران خان نے کہا کہ فرقہ وارانہ دہشت گردی قوم کے وجود کے خلاف ایک خطرے کے طور پر ابھر کر سامنے آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ کوئی معمول کی بات نہیں کہ جسے نظر انداز کیا جا سکے، مگر حکومتی سطحوں پر ایسا ہی کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ جو عناصر بیرونی قوتوں کے کہنے پر ایسی کارروائیاں کر رہے ہیں وہ جان بوجھ پر ملک میں بڑے پیمانے پر فرقہ ورانہ فسادات کروانے کی کوشش کر رہے ہیں، یہ ایسا معاملہ ہے جو ریاست کی انتہائی توجہ کا طالب ہوتا ہے، تمام ریاستی اداروں کی بھرپور کوششیں اس لعنت کے خلاف لڑنے اور خصوصی طور پر شیعہ ہزارہ افراد کے قتل میں ملوث مجرمان کو تلاش کرنے میں صرف ہونی چاہیں۔

چیئرمین عمران خان نے اپنے کوئٹہ دورے کے دوران ہزارہ کمیونٹی کی امام بارگاہ میں ملاقات کے دوران سنی گئی مظالم کی کہانیوں کا بھی ذکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف اس نسل کشی کو برداشت نہیں کریگی اور فرقہ ورانہ ہم آہنگی کے قیام کیلئے اپنا کردار ادا کریگی، مگر پارٹی اس لعنت کے خلاف انتظامی طور پر اقدامات نہیں اٹھا سکے گی، کیونکہ یہ صرف حکومتی سطح پر کیا جاسکتا ہے اور حکومت اپنی اس ذمہ داری کو بھول چکی ہے۔

http://www.islamtimes.org/vdcivrazvt1a3z2.s7ct.html

بابوسر میں 21 شیعہ مسافروں کا قتل المناک سانحہ ہے، چیف جسٹس افتخار محمد چوہدریاز خود نوٹس لیں – عمران خان

اسلام ٹائمز: چیئرمین پی ٹی آئی نے امامیہ جامع مسجد کے امام جمعہ شیخ محمد جعفری سے ملاقات کر کے قیام امن کے لئے ان کی کوششوں کو سراہا اور سانحہ لولوسر، سانحہ کوہستان اور سانحہ چلاس میں شہید ہونے والے مسافروں کی مغفرت کی دعا کی۔
اسلام ٹائمز۔ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری سے بلوچستان اور گلگت میں شیعہ افراد کی ٹارگٹ کلنگ کا از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ کمزور اور نااہل حکمران امن و امان کے قیام میں مکمل ناکام ہو چکے ہیں۔ 40 ہزار لوگ دہشت گردی سے جاں بحق ہو گئے ہیں۔ حکومت جب تک امریکہ سے پیسے لے کر ڈرون حملے کرواتی رہے گی دہشت گردی ختم نہیں ہو گی۔ ٹارگٹ کلنگ میں ملوث تنظیموں کی حوصلہ شکنی اور ملک میں فرقہ وارانہ فسادات کی بیخ کنی کے لئے تحریک انصاف اپنی کوششیں جاری رکھے گی۔ پاکستان میں تبدیلی کا انقلاب آ رہا ہے۔ موجودہ حکمرانوں نے گلگت بلتستان کے عوام کو کمزور اور وزیر اعلیٰ کو طاقتور بنا دیا ہے۔ ہم نئے بلدیاتی نظام کے ذریعے عوام کو طاقتور اور وزرائے اعلیٰ کو ان کے سامنے جوابدہ بنائیں گے۔

http://www.islamtimes.org/vdcbg5b8wrhb95p.kvur.html

About the author

Abdul Nishapuri

4 Comments

Click here to post a comment
  • چیف جسٹس شیعہ ہلاکتوں پر از خود نوٹس لیں، عمران
    پیر 3 ستمبر 2012
    Read this in English خبر رساں ادارے
    0

    حکومت عام لوگوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہوگئی، عمران خان۔ —اے ایف پی فوٹو
    اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے میڈیا کے توسط سے چیف جسٹس سے درخواست کی ہے کہ وہ بلوچستان اور گلگت – بلتستان میں جاری فرقہ وارانہ دہشت گردی پر از خود نوٹس لیں۔

    ڈان نیوز کے مطابق عمران خان نے اسکردو میں مختلف مکاتب فکر کی مساجد میں جاکر علماء کرام سے ملاقات کی اور اتحاد امت کو قائم رکھنے کیلئے روا داری کو فروغ دینے پر زور دیا۔

    اس موقع پر انہوں نے پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کہا کہ حکومت عام لوگوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہوگئی ہے۔

    انہوں نے بابو سر واقعہ کو بد ترین سانحہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ اور گلگت میں ایک فرقہ کے لوگوں کے قتل عام پر حکومتی خاموشی افسوس ناک ہے ۔

    انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس مختلف معاملات پر تو از خود نوٹس لیتے ہیں لیکن وہ فرقہ وارانہ دہشت گردی پر نوٹس نہیں لے رہے۔

    اس موقع پر انہوں نے وعدہ کیا کہ پی ٹی آئی ان دہشت گرد تنظیموں کے خلاف آواز آٹھاتی رہے گی جو جان بوجھ کر ملک میں انتشار پیدا کرنے کیلیے فرقہ وارانہ قتل وغارت کر رہی ہیں۔

    http://urdu.dawn.com/2012/09/03/imran-urges-sc-take-suo-moto-on-shia-killings/

  • Faisal Raza Abidi has been shouting for Suo Motto from Judiciary for the last many months but in vain. The CJ is more concerned in uprooting unfounded corruption of AAZ with an agenda.

  • Imran condemns ‘Hazara community genocide’
    By Online
    Published: September 3, 2012

    While its focus is transparency, lack of verification may render the exercise redundant. PHOTO: EXPRESS / FILE
    ISLAMABAD:
    Pakistan Tehreek-e-Insaf chief Imran Khan has condemned the killings of members of the Hazara community in Balochistan, terming it a ‘planned genocide’.
    The question arises, said Imran, that why has the leadership and members of the organisation involved in unabated sectarian killing not been identified and arrested.
    This shows a failure of both civil and military intelligence, complete helplessness bordering on indifference of the Balochistan government and criminal neglect by the federal government, he added.
    The PTI chairman said that sectarian terrorism has emerged as an existential threat to the nation; it is not something that can be ignored as a routine.
    He further said there is also suspicion that elements working on the behest of those outside may deliberately be trying to create a widespread sectarian conflict.
    Published in The Express Tribune, September 3rd, 201

    http://tribune.com.pk/story/430421/imran-condemns-hazara-community-genocide/

  • Hamid Mir ‏@HamidMirGEO
    Just spoke to Imran Khan on phone.He was very much disturbed on the security situation of GB.Will try to speak him in Capital Talk tonight.

    Saleem Javed ‏@mSaleemJaved
    @HamidMirGEO Can you please ask AG Balochistan as to what he means by ‘secret forces’ who disrupts peace in Quetta on CJ’s arrival?

    Hamid Mir ‏@HamidMirGEO
    @mSaleemJaved You know Amanullah Kunrani better than me.Off the record he will say Pakistani intelligence on the record he will name RAW

    Saleem Javed ‏@mSaleemJaved
    @HamidMirGEO It would be like RAW funded a lawyer to level accusations against you to stop you from doing a show in Quetta. Nay?

    Hamid Mir ‏@HamidMirGEO
    @mSaleemJaved I wanted to do a show in Hazar Ganji yesterday but my local colleagues said that its not safe area i will try again soon

    Saleem Javed ‏@mSaleemJaved
    @HamidMirGEO Yes. That area is dangerous. But Hazara Town and Alamdar Road are the safest areas in #Quetta. You can recheck it.

    irfan ‏@khudiali
    @e_clicker @mSaleemJaved @HamidMirGEO @azizhazara dear Hamid sb remember more deadly attacks will be thr becz govt is absent & LJ is present